Headlines

سرائیل۔ حماس جنگ کےدرمیان حماس کے سربراہ اسماعیل ہنیہ آج کریں گےمصرکادورہ، جنگ بندی پرکی جائےگی بات چیت

جنگ میں اب تک 19,600 فلسطینی ہلاک ہو چکے ہیں۔حماس کے مطابق حماس اب بھی غزہ میں 130 افراد کو یرغمال بنائے ہوئے ہے۔ اسرائیلی وزیراعظم بنجمن نیتن یاہو نے کہا ہے کہ تمام یرغمالیوں کی رہائی تک جنگ جاری رہے گی۔

سرائیل۔ حماس جنگ کےدرمیان حماس کے سربراہ اسماعیل ہنیہ آج کریں گےمصرکادورہ، جنگ بندی پرکی جائےگی بات چیت

جنگ میں اب تک 19,600 فلسطینی ہلاک ہو چکے ہیں۔حماس کے مطابق حماس اب بھی غزہ میں 130 افراد کو یرغمال بنائے ہوئے ہے۔ اسرائیلی وزیراعظم بنجمن نیتن یاہو نے کہا ہے کہ تمام یرغمالیوں کی رہائی تک جنگ جاری رہے گی۔

جنگ میں اب تک 19,600 فلسطینی ہلاک ہو چکے ہیں۔حماس کے مطابق حماس اب بھی غزہ میں 130 افراد کو یرغمال بنائے ہوئے ہے۔ اسرائیلی وزیراعظم بنجمن نیتن یاہو نے کہا ہے کہ تمام یرغمالیوں کی رہائی تک جنگ جاری رہے گی۔

حماس کے سربراہ اسماعیل ہنیہ اسرائیل کے ساتھ جنگ ​​بندی اور قیدیوں کے تبادلے پر بات چیت کے لیے آج مصر کا دورہ کریں گے۔ حماس کے ذرائع کا کہناہے کہ اس دورے کے دوران قیدیوں کی رہائی کے لیے معاہدہ تیار کرنے کے لیے بات چیت کی جائے گی۔ اس کے علاوہ جنگ بند کرنے اور غزہ کی پٹی پر مسلط محاصرہ ختم کرنے پر بات چیت ہوگی۔ گزشتہ ماہ اسرائیل اور حماس کے درمیان جنگ بندی کے دوران اسرائیلی جیلوں میں قید 240 فلسطینیوں کے بدلے 80 اسرائیلی یرغمالیوں کو رہا کیا گیا تھا۔حماس نے 130 افراد کو یرغمال بنا رکھا ہے۔اسرائیل کو نہ صرف امریکہ کی تائید حاصل ہے بلکہ امریکہ نے فوجی تعاون بھی فراہم کیا ہے۔اے ایف پی کے مطابق حماس کے سربراہ اسماعیل ہنیہ آج (20 دسمبر کو )مصر کا دورہ کریں گے۔ وہ اسرائیل کے ساتھ جنگ ​​بندی اور قیدیوں کے تبادلے پر بات چیت کے لیے مصر جارہے ہیں

ذرائع نے خبر رساں ادارے اے ایف پی کو بتایا کہ اسماعیل ہنیہ حماس کے ایک اعلیٰ سطحی وفد کی قیادت کریں گی، جہاں وہ مصری انٹیلی جنس کے سربراہ عباس کامل اور دیگر سے جاری جنگ پر بات چیت کے لیے ملاقات کریں گی۔

اس جنگ میں اب تک 19,600 فلسطینی ہلاک ہو چکے ہیں۔حماس کے مطابق حماس اب بھی غزہ میں 130 افراد کو یرغمال بنائے ہوئے ہے۔ اسرائیلی وزیراعظم بنجمن نیتن یاہو نے کہا ہے کہ تمام یرغمالیوں کی رہائی تک جنگ جاری رہے گی۔ 7 اکتوبر کو حماس کے دہشت گردوں کی جانب سے اسرائیل پر راکٹ حملے کیے گئے۔ اس حملے میں 1,140 افراد ہلاک ہوئے تھے۔ اس کے ساتھ ہی اسرائیل کی جانب سے حماس کے خلاف کی جانے والی فوجی کارروائی میں 19,600 فلسطینی ہلاک ہو چکے ہیں۔شامی فوجی اڈے کو نشانہ بنایا گیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *