Headlines

ایران ۔ پاکستان فضائی حملے: چین سے لے کر امریکہ، کون کھڑا کس کے ساتھ، جانئے ہندوستان نے دیا کا کس ساتھ؟

کہا جا سکتا ہے کہ یہ دور جنگوں کا ہے۔ روس کا یوکرین پر ، اسرائیل کا غزہ پر اور اب اسی ہفتے پاکستان اور ایران کا ایک دوسرے پر فضائی حملہ۔ دونوں ممالک کے اس فضائی حملے میں اب تک 11 بچوں کی موت ہوچکی ہے۔ ان ممالک نے یہ کہہ کر اپنا دفاع کیا ہے کہ ‘انہوں نے دہشت گرد گروہوں کے ٹھکانوں پر حملے کیے ہیں۔’

 کہا جا سکتا ہے کہ یہ دور جنگوں کا ہے۔ روس کا یوکرین پر ، اسرائیل کا غزہ پر اور اب اسی ہفتے پاکستان اور ایران کا ایک دوسرے پر فضائی حملہ۔ دونوں ممالک کے اس فضائی حملے میں اب تک 11 بچوں کی موت ہوچکی ہے۔ ان ممالک نے یہ کہہ کر اپنا دفاع کیا ہے کہ ‘انہوں نے دہشت گرد گروہوں کے ٹھکانوں پر حملے کیے ہیں۔’

 کہا جا سکتا ہے کہ یہ دور جنگوں کا ہے۔ روس کا یوکرین پر ، اسرائیل کا غزہ پر اور اب اسی ہفتے پاکستان اور ایران کا ایک دوسرے پر فضائی حملہ۔ دونوں ممالک کے اس فضائی حملے میں اب تک 11 بچوں کی موت ہوچکی ہے۔ ان ممالک نے یہ کہہ کر اپنا دفاع کیا ہے کہ ‘انہوں نے دہشت گرد گروہوں کے ٹھکانوں پر حملے کیے ہیں۔’

نئی دہلی : کہا جا سکتا ہے کہ یہ دور جنگوں کا ہے۔ روس کا یوکرین پر ، اسرائیل کا غزہ پر اور اب اسی ہفتے پاکستان اور ایران کا ایک دوسرے پر فضائی حملہ۔ دونوں ممالک کے اس فضائی حملے میں اب تک 11 بچوں کی موت ہوچکی ہے۔ ان ممالک نے یہ کہہ کر اپنا دفاع کیا ہے کہ ‘انہوں نے دہشت گرد گروہوں کے ٹھکانوں پر حملے کیے ہیں۔’ خیال رہے کہ پاکستان پر حملہ کرنے سے پہلے ایران نے اپنے پڑوسی ممالک عراق اور شام پر بھی میزائل اور ڈرون حملے کیے تھے۔ اس پر امریکہ کی طرف سے شدید تبصرہ کیا گیا، جس نے خود بدھ کے روز یمن کے حوثی ٹھکانوں پر حملہ کیا اور ان کے میزائلوں کے ذخیرے کو تباہ کرنے کا دعویٰ کیا۔

جمعرات کی صبح حملوں کے بعد اسلام آباد نے کہا کہ اس نے ‘دہشت گردوں کے ٹھکانوں پر سٹیک فوجی حملہ’ کیا۔ یہ ایک خفیہ فوجی آپریشن تھا جس کا کوڈ نام ’مارگ بار سماچار‘ ہے۔ فوج نے اس آپریشن میں کئی دہشت گردوں کو ہلاک کردیا ہے۔ پاکستان نے کہا کہ ‘ایران کے اندر غیر حکومتی علاقوں میں پاکستانی نژاد دہشت گردوں کی محفوظ پناہ گاہوں اور ٹھکانوں کے بارے میں اپنے سنگین تحفظات کا مسلسل اظہار کیا گیا تھا۔’ پاکستان نے ایران سے اپنے اعلیٰ سفارت کار کو واپس بلا لیا اور تہران کے ہم منصب کو باہر کردیا ہے ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *