Headlines

گجرات، اترا کھنڈ کے بعد آسام میں لاگو ہوگا یونیفارم سول کوڈ، وزیراعلی ہیمنت بسو سرما کا بڑا بیان

آسام کے وزیر اعلیٰگجرات، اترا کھنڈ کے بعد آسام میں لاگو ہوگا یونیفارم سول کوڈ، وزیراعلی ہیمنت بسو سرما کا بڑا بیان

گجرات، اترا کھنڈ کے بعد آسام میں لاگو ہوگا یونیفارم سول کوڈ، وزیراعلی ہیمنت بسو سرما کا بڑا بیان

آسام کے وزیر اعلیٰ ہمنت بسوا سرما نے کہا کہ ریاست میں جلد ہی یکساں سول کوڈ (یو سی سی) نافذ کردیا جائے گا۔ وزیر اعلی سرما نے کہا کہ ہم اتراکھنڈ اور گجرات کی طرح یو سی سی لائیں گے۔ آسام کے یکساں سول کوڈ میں کچھ زیادہ قوانین ہوں گے، ساتھ ہی ہم ان ریاستوں کے یو سی سی بل کے حساب سے بھی ریاست میں یکساں سول کوڈ لائیں گے۔


Uniform Civil Code in Assam

گوہاٹی : آسام کے وزیر اعلیٰ ہمنت بسوا سرما نے کہا کہ ریاست میں جلد ہی یکساں سول کوڈ (یو سی سی) نافذ کردیا جائے گا۔ وزیر اعلی سرما نے کہا کہ ہم اتراکھنڈ اور گجرات کی طرح یو سی سی لائیں گے۔ آسام کے یکساں سول کوڈ میں کچھ زیادہ قوانین ہوں گے، ساتھ ہی ہم ان ریاستوں کے یو سی سی بل کے حساب سے بھی ریاست میں یکساں سول کوڈ لائیں گے۔ میں اتراکھنڈ کا یو سی سی بل کو دیکھنے کا انتظار کر رہا ہوں۔ آسام میں قبائلی برادری کو یو سی سی کے دائرہ سے مستثنیٰ رکھا جائے گا۔ اس سے پہلے ہمنت بسوا سرما نے ریاستی بی جے پی ایگزیکٹو کی میٹنگ سے خطاب کیا۔ جس میں انہوں نے کہا کہ ہم اس دن کا انتظار کر رہے ہیں جب اتراکھنڈ اور گجرات کے بعد آسام ایسی ریاست بنے گی جو یکساں سول کوڈ کو نافذ کرے گی۔

قابل ذکر ہے کہ ملک میں یکساں سول کوڈ کے تعلق سے مرکزی وزیر قانون ارجن رام میگھوال نے دعویٰ کیا ہے کہ یکساں سول کوڈ کی اہمیت اور حساسیت کو ذہن میں رکھتے ہوئے لا کمیشن اس سے متعلق سبھی پہلوؤں کا مطالعہ کر رہا ہے۔ بی جے پی کے راجیہ سبھا کے رکن پارلیمنٹ ہرناتھ سنگھ یادو نے سرمائی اجلاس کے دوران 8 دسمبر 2023 کو راجیہ سبھا میں وقفہ صفر کے دوران یکساں سول کوڈ کا مسئلہ اٹھایا تھا۔ حکومت کی جانب سے اس کا جواب دیتے ہوئے مرکزی وزیر قانون ارجن رام میگھوال نے بی جے پی رکن پارلیمنٹ یادو کو خط لکھ کر ان کی تجاویز کے لئے ان کا شکریہ ادا کیا تھا۔

One thought on “گجرات، اترا کھنڈ کے بعد آسام میں لاگو ہوگا یونیفارم سول کوڈ، وزیراعلی ہیمنت بسو سرما کا بڑا بیان

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *