سورنا سودھا میں نصب ساورکر کی تصویر سے مچاہنگامہ نقاب کشائی کے لئے بی جے پی نے اپنایا انتہائی خفیہ طریقہ اسمبلی اجلاس کے پہلے ہی دن حکمراں طبقہ اور اپوزیشن میں زبردست تکرار

RushdaInfotech December 20th 2022 urdu-news-paper
سورنا سودھا میں نصب ساورکر کی تصویر سے مچاہنگامہ نقاب کشائی کے لئے بی جے پی نے اپنایا انتہائی خفیہ طریقہ اسمبلی اجلاس کے پہلے ہی دن حکمراں طبقہ اور اپوزیشن میں زبردست تکرار

بلگاوی:19دسمبر (سالارنیوز) بلگاوی کے سورنا ودھان سودھا میں آج سرمائی اسمبلی سیشن کے پہلے دن ہی ویرساور کر کی تصویر کی نقاب کشائی کی گئی۔ حالانکہ ریاستی بی جے پی حکومت کے اس اقدام کے خلاف کانگریس نے احتجاج کیا۔ سورنا سودھا کے اسمبلی ہال میں ساورکر کی تصویر اب 7مجاہد آزادی کے درمیان آویزاں کی گئی ہے۔ ساورکر کی یہ تصویر اسمبلی ہال میں کانگریس لیڈروں اورلجس لیٹرس کی غیر موجودگی میں لگائی گئی۔ اس موقع پر وزیراعلیٰ بسو راج بومئی، اسمبلی اسپیکر ویشویشور ہیگڈے کاگیری، ویزر قانون جے مادھو سوامی، وزیرآبی وسائل گووند کارجول اور دیگر حاضر رہے۔ ذرائع کے مطابق جس وقت اسمبلی ہال میں ویر ساورکر کی تصویر کی نقاب کشائی عمل میں آئی، اسمبلی کے تمام چاروں دروازے بند کردیئے گئے تھے تاکہ کوئی رکاوٹ نہ ہو۔ گویا یہ پوری تقریب خفیہ طریقہ سے کی گئی۔ آزاد ہندوستان کی تاریخ میں پہلی بار کسی اسمبلی ہال میں ویرساورکر کی تصویر آویزاں ہے۔ اس تصویر کو لگائے جانے کے خلاف کانگریس احتجاج پر بی جے پی ایم یل سی روی کمارنے یہ کہتے ہوئے اعتراض کیا کہ آزادی کی جنگ صرف کانگریس لیڈروں اور نہرو نے نہیں لڑی تھی۔ روی کمار نے دعویٰ کیا کہ ویر ساورکر نے ملک کے پوری انقلابی نسل کو ترغیب دلائی تھی۔ انہوں نے سوال کیا کہ اس مجاہد آزادی کی تصویر لجس لیٹیو اسمبلی، پارلیمان اور عوامی مقامات میں نہیں تو کہاں ہونی چاہئے۔ کانگریس کا بیان کہ اگر ویر ساورکر کی تصویر اسمبلی ہال میں لگائی گئی ہے تو وہ میسور کے حکمران ٹیپو سلطان کی تصویر بھی اسمبلی ہال میں نصب کریں گے۔ اس پر روی کمار نے کہاکہ ٹیپوسلطان مندروں کو مسمار کرنے والے سلطان ہیں۔ انہوں نے کنڑا کی جگہ فارسی زبان نافذ کرنے کی کوشش کی۔ وہ بنگلورو کے بانی کیمپے گوڈا اورکوئمپو کے اصولوں کے خلاف تھے۔ انہوں نے کہاکہ ودھان سودھا دور کی بات ہے۔ ہم کسی بھی مقام پر ٹیپو سلطان کی تصویر لگانے کی اجازت نہیں دیں گے۔ بی جے پی کے رکن اسمبلی بسون گوڈا پاٹل یتنال نے کہاکہ کانگریسی لیڈر یہ بھول گئے ہیں کہ آنجہانی وزیر اعظم اندرا گاندھی نے ویر ساورکر کا پوسٹل اسٹامپ جاری کروایا تھا۔ کسی بھی عوامی مقام پر ہم ٹیپو سلطان کی تصویر لگانے نہیں دیں گے۔ وہ کٹر پسند مسلم سلطان تھے۔ اس معاملہ پر تبصرہ کرتے ہوئے کے پی سی سی صدر ڈی کے شیوکمار نے ایک بیان میں کہاکہ کرناٹک اورویرساورکر کا کیا تعلق ہے؟ اس پر بی جے پی رکن اسمبلی ایشورپا نے سوال کیا کہ کرناٹک اور راہل گاندھی، سونیا گاندھی کا کیا تعلق ہے؟۔ شیوکمار پر طنز کرتے ہوئے ایشورپا نے کہاکہ شیوکمار کو صرف تہاڑ جیل اور بنگلورو سنٹرل جیل کا علم ہے۔ سلیولر جیل اور انڈومان میں جنگ آزادی کے مجاہدین کو کتنی سخت سزائیں دی جاتی تھیں،شیوکمار کو اس کا مطالعہ کرنے کی ضرورت ہے۔


Recent Post

Popular Links