رب چاہی زندگی سے ہی عقیدۂ ختم نبوت کی حفاظت ممکن گوری پالیہ جامع مسجد میں تحفظ ختم نبوت کانفرنس سے مفتی مولانا شاہ جمال الرحمن کا خطاب

RushdaInfotech December 19th 2022 urdu-news-paper
رب چاہی زندگی سے ہی عقیدۂ ختم نبوت کی حفاظت ممکن  گوری پالیہ جامع مسجد میں تحفظ ختم نبوت کانفرنس سے مفتی مولانا شاہ جمال الرحمن کا خطاب

بنگلور و۔18دسمبر(سالار نیوز) گوری پالیہ جامع مسجد میں تحفظ ختم نبوت کانفرنس منعقد کی گئی،جس میں تلنگانہ وآندھرا پردیش کے صدر مجلس تحفظ ختم نبوت ٹرسٹ مفتی مولانا شاہ جمال الرحمن نے کہا کہ اسلام، اقراء کی بنیاد پر کھڑا ہے، جہاں لاعلمی اور جہالت کیلئے کوئی جگہ نہیں ہے، اگر اقراء پر عمل نہ کیاگیا، تعلیم حاصل نہ کی گئی، تعلیم کے ذریعہ دین و شریعت کو نہ سمجھا گیا، تو ایسی اقوام پر جہالت مسلط کردی جائے گی۔ جہالت جتنی زیادہ ہوگی، اتنے ہی فتنے پیدا ہوں گے، جہالت، نئی نئی خواہشوں کو جنم دیتی ہے، اور جتنی شدت سے خواہشات پر عمل ہوگا، اتنی ہی شدت سے قوموں کو فتنوں میں مبتلا کردیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ دین و شریعت، انسان کی بے جا خواہشات پر لگام لگاتے ہیں، اور نفس کی اطاعت کی بجائے ربانی مرضیات پر زندگی گزارنے کی دعوت دیتے ہیں، رب چاہی زندگی کو چھوڑ کر اگر انسان من چاہی زندگی گزارنے لگے تو اللہ پاک نئے نئے فتنے پیدا کرتے ہیں۔مولانا نے کہا کہ اس کے برخلاف اپنی زندگی کے ہر ہر عمل میں من چاہی زندگی چھوڑ کر رب چاہی زندگی اپنالی جائے تو رب عظیم، فتنوں سے محفوظ رکھتے ہیں، موصوف نے کہا کہ فتنے کیوں اور کن راستوں سے آرہے ہیں، اس کا پتہ لگانا ضروری ہے، جہاں تک شریعت کی زبان کہتی ہے کہ جہالت، شبہات اور خواہشات کی پیروی کی وجہ سے فتنے در آئیں گے۔ تحفظ ختم نبوت کی مہم اسی وقت کامیاب و کامران ہوگی جب ہم اپنی زندگیوں میں نبی پاک علیہ السلام کی ہر ہر سنت کو اپنا کام زندگی گزاریں گے، ہر سنت کی حفاظت ختم نبوت کے تحفظ کی ضمانت ہے، اس کے بغیر تحفظ ختم نبوت ممکن نہیں۔ انہوں نے کہا کہ اللہ و رسول علیہ السلام کی احکامات کو بجالانا، تحفظ ختم نبوت کا بہترین ذریعہ ہے، اللہ و رسول کے احکامات سے منہ موڑا گیا تو یقین مانئے، فتنے زمینوں سے ابال دئے جائیں گے، گھر کے ہر ہر کونے سے فتنے پیدا کئے جائیں گے۔اس مو قع پر جمعیت علماء کرناٹک کے صدر مو لانا مفتی افتخار احمد قاسمی،مفتی مولانا شاہ جمال الرحمن کے خلیفہ مولانا مفت طاہر، کے علاوہ دیگر علماء کرام،عمائدین، ائمہ کرام کے علاوہ بڑی تعداد میں فرزندان توحید شریک رہے۔ خواتین کے لئے پردہ کا انتظام کیا گیا تھا۔ اس مو قع پر گوری پالیہ جامع مسجد کے صدر منور خان نے تمام مہمانوں کو تہنیت پیش کی۔ جلسہ کی نظامت مسجد کے امام وخطیب مفتی انعام الحسن نے کی۔ اس موقع پر گوری پالیہ جامع مسجد مجلس منتظمہ کے تمام اراکین حاضر رہے۔جلسہ کے دوران فتنوں کے متعلق پریزنٹیشن پیش کیا گیا۔


Recent Post

Popular Links