کسی بھی چیز پر جی ایس ٹی کی شرح میں کوئی اضافہ نہیں:سیتا رمن

RushdaInfotech December 18th 2022 urdu-news-paper
کسی بھی چیز پر جی ایس ٹی کی شرح میں کوئی اضافہ نہیں:سیتا رمن

نئی دہلی، 17 دسمبر (یو این آئی) گوڈز اینڈ سروسز ٹیکس (جی ایس ٹی) کونسل نے جی ایس ٹی قانون کے تحت بعض جرائم کو جرم کے زمرے سے باہر کرنے کے ساتھ ہی جعلی رسید جاری کرنے کو چھوڑ کراس قانون کے تحت قانونی کارروائی شروع کرنے کے لئے اقتصادی حد کو بڑھانے کا فیصلہ کیا ہے۔ اس رقم کو 1 کروڑ روپے سے بڑھا کر 2 کروڑ روپے کرنے کافیصلہ کیا گیا ہے۔وزیر خزانہ نرملا سیتا رمن کی صدارت میں آج ہوئی کونسل کی 48ویں میٹنگ میں اس کے ساتھ کئی دوسرے فیصلے بھی کیے گئے۔ تاہم وقت کی کمی کی وجہ سے گٹکا اور تمباکو پر کوئی بات نہیں ہو سکی۔ آج کے اجلاس کے لئے تقریباً 15 معاملات درج کیے گئے تھے جن میں سے صرف آٹھ پر بات ہو سکی۔ سیتا رمن نے میٹنگ کے بعد نامہ نگاروں کو یہ جانکاری دی۔ انہوں نے کہا کہ حکومت جی ایس ٹی کی بنیاد کو بڑھانے کی ہر ممکن کوشش کر رہی ہے۔ کسی بھی شے پر جی ایس ٹی نہیں بڑھایا گیا بلکہ دالوں کے چھلکے، چونی اور کھانڈپر جی ایس ٹی پانچ فیصد سے کم کر کے صفر کر دیا گیا ہے۔ اسی طرح پیٹرول کے ساتھ ملاوٹ کے لئے ریفائنریوں کو فراہم کی جانے والی ایتھائل الکحل پر جی ایس ٹی کو بھی 18 فیصد سے کم کرکے پانچ فیصد کردیا گیا ہے۔جی ایس ٹی ایکٹ کی دفعہ 132 کے تحت بعض جرائم کو جرم کے زمرے سے باہر کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ اس کے ساتھ ساتھ جی ایس ٹی قانون کے تحت قانونی کارروائی شروع کرنے کیلئے مالیاتی شراکت کی حد کو 1 کروڑ روپے سے بڑھا کر 2 کروڑ روپے کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے، لیکن اس میں جعلی رسید جاری کرنے کا جرم شامل نہیں ہے۔


Recent Post

Popular Links