دفاعی امتحانات کی تیاری کرنے نوجوانوں کی رہنمائی کیلئے ورکشاپ میڈیکل اور انجینئرنگ کی مانند دفاع اور پولیس کی ملازمتوں پر بھی توجہ ضروری: ڈاکٹر ایم اے سلیم

RushdaInfotech November 25th 2022 urdu-news-paper
دفاعی امتحانات کی تیاری کرنے نوجوانوں کی رہنمائی کیلئے ورکشاپ  میڈیکل اور انجینئرنگ کی مانند دفاع اور پولیس کی ملازمتوں پر بھی توجہ ضروری: ڈاکٹر ایم اے سلیم

بنگلورو۔24نومبر(سالار نیوز)ملک کے دفاع میں لگی فوج کی تینوں یونٹوں بری فوج، فضائیہ، بحریہ اور دیگر دفاعی شعبوں سے جڑ کر ان میں کام کرنے کے لئے مسلم نوجوانوں میں بیداری لانے اور اس جانب توجہ دینے کے لئے ان کو ترغیب دلانے کے لئے جمعرات کے روز ریاستی محکمہ اقلیتی بہبود، حج و اوقاف اور کرناٹکا اسٹیٹ بورڈ آف اوقاف کی جانب سے ایک ورکشاپ منعقد کیا گیا، جس میں سینئر سرکاری افسروں نے دفاعی شعبے سے جڑی بھرتیوں کے لئے کروائے جانے والے امتحانات کی تیاری کے بارے میں نوجوانوں کو خصوصی تربیت اور رہنمائی کی۔اس پروگرام کا افتتاح اڈیشنل ڈائرکٹر جنرل آف پولیس اور بنگلور و پولیس کے اسپیشل پولیس کمشنر (ٹرافک) ایم اے سلیم نے کیا۔انہوں نے اس موقع پر اپنے خطاب میں کہا کہ جس طرح میڈیکل اور انجینئرنگ کورسوں میں داخلوں کے لئے نیٹ اور سی ای ٹی امتحان کی جانب توجہ دی جاتی ہے، اسی طرح پولیس اور دفاع کے شعبوں میں بھرتی کے مرحلہ میں بھی توجہ دینے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے دفاعی امتحانات کی تربیت کے لئے وقف بورڈ کی پہل کو خوش آئند قرار دیا۔ محکمہ کو آپریشن کے ڈائرکٹر اور حج کمیٹی کے ایکزیکٹو آفیسر سرفراز خان مہمان خصوصی رہے۔ انیس ڈیفنس کیرئیر انسٹی ٹیوٹ، پونے، مہاراشٹرا کے ڈائرکٹر انیس کٹی ار میجر جنرل کے ارجن متنا، سابق ڈائرکٹر، کرناٹکا انسداددہشت گردی مرکز اس کارگاہ کے ریسورس پرسن رہے۔ ان دونوں نے شرکاء کو دفاعی شعبہ میں دستیاب مواقع کے بارے میں رہنمائی کرنے کے ساتھ ساتھ ان بھرتیوں کے لئے ہونے والے امتحان کی تیاری اور اس مرحلہ میں آنے والے چیلنجوں سے انہوں نے امیدوارو ں کو باخبر کروایا اور کہا کہ ملک کے دفاعی شعبہ سے جڑ کر نوجوانوں کو ملک کے لئے کام کرنے کے بہتر مواقع دستیاب ہیں، اس جانب مسلمان نوجوانوں میں توجہ دینے کا رجحان کافی کم ہے۔ اس سلسلہ میں مسلم نوجوانوں کے نظریہ میں تبدیلی اور دفاعی یونٹوں سے جڑنے کے لئے رجحان سازی پر انہوں نے زور دیا۔ شام میں اس کارگاہ کا اختتامی اجلاس کرناٹک اسٹیٹ بورڈ آف اوقاف کے چیرمین این کے ایم شافع سعدی کی صدارت میں منعقد ہوا، جس میں وزیر اقلیتی بہبود،اوقاف و حج ششی کلا جولے کے پرائیویٹ سکریٹری چدمبرم،ریاستی وقف بورڈ کے اراکین اوردیگر شریک رہے۔ اس موقع پر شافع سعدی نے اپنے خطاب میں کہا کہ مسلم نوجوانوں کو دفاعی شعبوں کی جانب راغب کروانے کے لئے یہ کارگاہ کافی معاون ثابت ہو گی۔ انہوں نے کہا کہ اس طرح کے ورکشاپس کا اہتما م آنے والے دنوں میں ریاست کے تمام پانچ ڈیویژنوں میں کیا جائے گا۔ صرف دفاعی نہیں بلکہ آنے والے دنوں میں مسابقتی امتحانات، پولیس اور دیگر سرکاری محکموں میں بھرتی کے سلسلہ میں بھی تربیت سے آراستہ کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ وقف بورڈ کی طرف سے بنگلورو کے ڈبل روڈ پر ایک مسابقتی امتحانات کا تربیتی مرکز قائم کیا جا رہا ہے، جس کے لئے عمارت اور پورا انفراسٹرکچر معروف بلڈر اور مخیر قوم ضیاء اللہ شریف کی طرف سے مہیا کروایا جا رہا ہے۔ اس موقع پر وقف بور ڈ کے چیف ایکزی کیٹو آفیسر پرویز خان، وقف بورڈکے ممبران ریاض خان، یعقوب، محترمہ قاضی نفیسہ اور دیگر حاضر رہے۔


Recent Post

Popular Links