مساجد سے حالات حاضرہ پر جانکاری فراہم کی جائے

RushdaInfotech November 24th 2022 urdu-news-paper
مساجد سے حالات حاضرہ پر جانکاری فراہم کی جائے

رام نگرم:23(غضنفر علی بیگ)رام نگرم کے لائنس کلب آئی اسپتال میں سید طلحہ پاشاہ سابق کونسلر کی نگرائی میں کرناٹکا مسلم متحدہ محاذ کی جانب سے ایک سمینار منعقد کیا گیا تھا جس میں انتخابات میں ووٹ کی شرعی حیثیت کے بار ے میں غور و فکر کیا گیا۔ جلسے کا آغاز قرأت پاک سے ہوا۔کرناٹکا مسلم متحدہ محاذ کے ریاستی سکریٹری سید اقبال، احمد شریف، اکبر علی، اللہ بخش، سید احجاز بخاری، حاجی حبیب اللہ رام نگرم اربن بینک چیرمین،امجد پاشاہ،منسپل کونسلر س، جمعیت علماء کے ذمہ داروں کے علاوہ کثیر تعداد میں عام شہری موجود رہے۔اجلاس میں کہا گیا کہ ہماری پہچان ہی ووٹر آئی ڈی کارڈ ہے ہمارے نوجوانوں سے اپیل ہے کہ ہر محلے میں گھر گھر جاکر کارڈ کے بارے میں فکر کریں۔ ہر مسجد کے ذمہ دار کو چاہے کہ ہر جمعہ میں اپنے خطاب کے دوران ووٹر آئی ڈی کے بار ے میں دس منٹ کی آگاہی دیں۔ مسجدوں کو مرکز بنا کر ہم ہمارے مسائل کا حل تلاش کر سکتے ہیں۔ مسجد وں سے بھی حالات حاضرہ کے بارے میں جانکاری دی جائے۔ اگر ہم اپنی مسجدوں کو اپنا مرکز بنا کر ہمارے مسائل کا حل تلاش کریں گے تو ممکن ہے کہ ہمیں بہت ہی آسانی ہوگی۔ الیکشن بہت قریب ہے ہم اپنے نمائندے کو چن سکتے ہیں۔ موجودہ حکومت کو صرف اپنے مقاصد کی فکر ہے جس کیلئے وہ سارے ملک کو تباہی ہی طرف لے جارہی ہے۔ مسلمانوں کو ان چار کاموں پر زور دینا چا ہے اپنے صحیح نمائندہ کو چنیں،ووٹوں کا مکمل استعمال کریں اور سب ایک ہوکر ووٹ دیں اور ووٹنگ کی تعداد زیادہ بنائیں۔ تعلیم یافتہ طبقہ سیاست میں بڑھ چڑھ کر حصہ لے اس سے قوم اور ملک کا فائدہ ہوگا۔اکثر نوجوان اپناوقت موبائل فون پر ضائع کرتے ہیں اس سے کچھ فائدہ ہونے والا نہیں ہے اگر اپنا قیمتی وقت سیاست پر بھی دیں گے تو قوم و ملک کے مفاد میں ہوگا۔ ریاست میں ایک سو دس ایسے اسمبلی حلقے ہیں جہاں تعداد اتنی ہے کہ ہم کسی بھی لیڈر کو فتح اور شکست دینے کی طاقت رکھتے ہیں مگر ہمارے ووٹوں کے بکھراؤکی وجہ سے صحیح نمائندہ چننا ممکن نہیں ہوتا۔پورے ملک میں تین سو سے زیادہ یونیورسٹیاں موجود ہیں مگر مسلمانوں کی صرف دو چار سے زیادہ نہیں ہیں مولوی غفار کی دعا سے جلسے کا اختتام ہوا۔


Recent Post

Popular Links