ملک کی ترقی کیلئے تعلیم اور صحت نہایت اہم:سدھاکر

RushdaInfotech November 24th 2022 urdu-news-paper
ملک کی ترقی کیلئے تعلیم اور صحت نہایت اہم:سدھاکر

وجیا پورہ:23نومبر (عبدالمعید،نامہ نگار) ملک کی ترقی کیلئے تعلیم اور صحت اہم ہیں، اس کے بغیر کچھ حاصل نہیں کیا جاسکتا آج کے حالات میں غربت، ذات پات، سماج، کوئی بھی چیز تعلیمی عمل میں رکاوٹ نہیں بن سکتی۔ان خیالات کا اظہارنارائن پور گاؤں میں انڈین آئل کارپوریشن کی جانب سے 78 لاکھ کی لاگت سے 8 کمروں پر مشتمل سرکاری ہائر پرائمری اسکول کی نئی عمارت کا افتتاح کرنے کے بعد ضلع انچارج وزیر کے سدھاکر نے خطاب کرتے ہوئے کیا۔فرد کی ترقی اور معاشرے کی بہتری کیلئے تعلیم بہت ضروری ہے۔ آزادی امرتا مہوتسوا کے حصے کے طور پر وویکا یوجنا کے تحت سرکاری اسکولوں کے احاطے میں 5000 کمرے تعمیر کیے جارہے ہیں۔ کمیونٹی ہیلتھ سنٹرز کو اپ گریڈ کیا جا رہا ہے۔ سرکاری اسکولوں کی کمیوں کو دور کیا جائے۔ سرکاری اسکولوں کا موازنہ پرائیویٹ اسکولوں سے نہ کیا جائے۔ اساتذہ کو بھی اسے ایک چیلنج کے طور پر قبول کرنا چاہیے۔ سرکاری اسکول سر ایم ویشوریا، ڈاکٹر بی آر امبیڈکر اور دنیا میں بڑی شہرت حاصل کرنے والے ہزاروں کارناموں کی کامیابیوں کا نقطہ آغاز رہے ہیں۔ اساتذہ بچوں کے بہتر مستقبل کیلئے پہل کریں۔ہم ایک ایسے ملک میں ہیں جہاں 50 فیصد نوجوان ہیں، دنیا ہندوستان کی طرف دیکھ رہی ہے۔10سال پہلے ہندوستان کے بارے میں ہمارے ہم وطنوں کا نظریہ مختلف تھا۔ اب ہم جی 20 میں صدارت حاصل کرنے کے مرحلے تک پہنچ چکے ہیں۔ سیاست کرنے سے میدان ترقی نہیں کرے گا۔ ذات کو ترقی کی راہ میں رکاوٹ نہیں بننا چاہیے۔بلاتفریق ترقی کیلئے بھرپور تعاون کریں گے۔رکن پارلیمان بی این بچے گوڈا نے کہا کہ اساتذہ کو اسکولوں میں تعلیمی معیار کو بڑھانے کیلئے سوچنا چاہیے۔ والدین کو بھی چاہیے کہ وہ اساتذہ کے ساتھ مزید تعاون کریں۔ چونکہ مرکزی حکومت نے کووڈ کی وجہ سے ممبران پارلیمنٹ کی 5 کروڑ روپے کے سالانہ گرانٹ کو تین سال کیلئے روک رکھا ہے، اس لیے ترقی کیلئے گرانٹ جاری نہیں کیا گیا۔حکومت کو بھی ریاست میں اساتذہ کی کمی کو دور کرنے کی ضرورت ہے۔رکن اسمبلی نسرگا نارائن سوامی نے کہا کہ سرکاری اسکولوں میں مسائل کو ختم کرنے کیلئے مخلصانہ کام کیا جا رہا ہے۔ حکومت کے اس حکم کے پیش نظر سی ایس آر گرانٹ لازمی دیا جائے، دیہی علاقوں میں اعلیٰ معیار کی عمارتیں تعمیر کی جا رہی ہیں۔ ا سکولوں میں سیاست کی اجازت دیے بغیر بچوں کو معیاری تعلیم دی جائے۔اس موقع پرضلع پنجایت کے سی ای او ریونپا، ڈپٹی ڈائرکٹر آف ایجوکیشن سریکانت، تحصیلدار شیوراج، ای او وسنت کمار، فیلڈ ایجوکیشن آفیسر وی سی بسواراجی گوڑا، کے پی سی سی ممبر بی چیتن گوڑا، گرام پنجایت صدر آنندممامنجوناتھ، نائب صدر مرلی موہن، سابق ضلع پنجایت ممبر اننتھک منجوناتھ، نائب صدر منموہن سنگھ اور دیگر موجود تھے۔


Recent Post

Popular Links