ہندوستان، کشمیر میں دفعہ370کا فیصلہ واپس لے:اوآئی سی

RushdaInfotech September 23rd 2022 urdu-news-paper
ہندوستان، کشمیر میں دفعہ370کا فیصلہ واپس لے:اوآئی سی

نیویارک:22ستمبر(ایجنسی) اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی (یواین جی اے)میں منعقداجلاس کے موقع پر اسلامی تعاون تنظیم(او آئی سی) نے ایک بار پھر زور دیتے ہوئے کہاہے کہ ہندوستان کشمیرسے دفعہ 370کے منسوخی کا فیصلہ لے۔ اسلامی تعاون تنظیم نے بین الاقوامی برادری سے مطالبہ کیا کہ وہ ہندوستان کو ”گھناؤنے جرائم“کیلئے جوابدہ ٹھہرائے۔ قبل ازیں، جموں و کشمیر کی خصوصی حیثیت کی منسوخی کی تیسری برسی پر، او آئی سی نے عالمی برادری سے مطالبہ کیا کہ وہ اقوام متحدہ کی متعلقہ قراردادوں کے مطابق ”تنازعہ“کو حل کرنے کیلئے اقدامات کرے۔ ہندوستان کا ابھی تک اس پر کوئی ردعمل سامنے نہیں آیاہے لیکن ہندوستان کا ہمیشہ ایک ہی موقف رہاہے کہ کشمیرہندوستان کا اٹوٹ حصہ ہے،کسی کو بھی اس معاملہ میں مداخلت کا حق نہیں۔واضح رہے کہ ہندوستان نے 5/ اگست 2019کو جموں و کشمیر کی”خصوصی ریاست“کی حیثیت کو ختم کرتے ہوئے کشمیر سے دفعہ 370کو منسوخ کر دیاتھا،جس پرپاکستان، ترکی اور تمام مسلم ممالک نے ہندوستان کے اس فیصلے کی مخالفت کی تھی۔واضح رہے کہ اسلامی تعاون تنظیم(اوآئی اسی)ایک بین الاقوامی تنظیم ہے جس میں مشرق وسطیٰ، شمالی، مغربی اورجنوبی افریقہ، وسط ایشیا، یورپ، جنوب مشرقی ایشیا اور برصغیر اور جنوبی امریکہ کے 57مسلم اکثریتی ممالک شامل ہیں۔21 /اگست 1969 کو مسجد اقصیٰ پر یہودی حملے کے ردعمل کے طور پر 25 ستمبر 1969 کو مراکش کے شہر رباط میں او آئی سی کا قیام عمل میں آیا۔او آئی سی دنیا بھر کے 1.2/ارب مسلمانوں کے مفادات کے تحفظ کیلئے کام کرتی ہے۔ لیکن افسوس کے ساتھ کہنا پڑتا کہ اس تنظیم نے اپنے پلیٹ فارم سے اپنے قیام سے لے کر آج تک مسلمانوں کے مفادات کے تحفظ اور مسائل کے حل کے سلسلے میں سوائے اجلاس کے کچھ نہیں کیا۔


Recent Post

Popular Links