قرآن اورمقدس کتابوں کی تعلیمات کا کوئی کاپی رائٹ نہیں:عدالت

RushdaInfotech August 4th 2022 urdu-news-paper
قرآن اورمقدس کتابوں کی تعلیمات کا کوئی کاپی رائٹ نہیں:عدالت

نئی دہلی۔ 3اگست (آئی این ایس) دہلی کی ایک عدالت نے اسلامک اسٹڈیز نامی کتاب کی اشاعت پر دائر کاپی رائٹ کی خلاف ورزی کا مقدمہ خارج کر دیا ہے۔ اس کے ساتھ عدالت نے درخواست گزار پر 50 ہزار روپے کا جرمانہ بھی عائد کرتے ہوئے کہا کہ مقدس کتابوں قرآن و حدیث یا دیگر اسلامی کتابوں میں لکھی گئی تعلیمات پر کسی کا کاپی رائٹ نہیں ہو سکتا۔ تیس ہزاری کورٹ کے ڈسٹرکٹ جج (کمرشل) سنجیو کمار اگروال نے کہا کہ کچھ مواد مقدس کتابوں قرآن و حدیث میں دی گئی تعلیم سے ملتا جلتا ہونا چاہئے۔ مذہب اسلام سے متعلق دیگر مذہبی کتابوں کو اسلام کی تعلیم سے متعلق تمام کتابوں میں یکساں ہونا چاہئے۔ میری نظر میں مقدس کتابوں قرآن و حدیث یا دیگر اسلامی کتابوں میں لکھی گئی تعلیمات پر کسی کا حق اشاعت نہیں ہو سکتا۔یہ مقدمہ شہر کے دریا گنج میں واقع اسلامی کتابوں کے ناشر اورتقسیم کار اسلامک بک سروس (پی) لمیٹڈ نے دائر کیا تھا، جس میں دعویٰ کیا گیا تھا کہ مولوی کی کتابوں کی ایک سیریز اسلامی تعلیم نامی ادبی تصنیف کے مالک اور مصنف ہیں۔ عبدالعزیز نے بنا شرط اپنا کاپی رائٹ کمپنی کے حوالے کر دیا تھا اور اپنے کام کا مخطوطہ بھی حوالے کر دیا تھا۔ مدعی کا مقدمہ تھا کہ جماعت اول سے جماعت ہشتم تک کی کتاب ”مطالعہ اسلام“ 1992 میں پبلشر کی طرف سے مسلسل شائع ہو رہی ہے۔ یہ دہلی کے ساتھ ساتھ بیرون ملک میں بھی بڑے پیمانے پر فروخت ہوتی ہے۔مدعی کمپنی نے الزام لگایا کہ مئی 2018 میں یہ انکشاف ہوا کہ مدعا علیہ عبدالرؤف نجیب بکلی نے مولوی عبدالعزیز کے ادبی کام کو اسلامک اسٹڈیز گریڈ 1 سے گریڈ 5 کے نام اور انداز میں شائع کرنا شروع کیاتھا۔ اس طرح مدعی کمپنی کا دعویٰ ہے کہ مدعا علیہ نے مولوی عبدالعزیز کی مذکورہ کتابوں اور ادبی کاموں کے مندرجات کو غلط طریقے سے پیش کیا ہے۔ اس نے یہ بھی دعویٰ کیا کہ مدعی کا تجارتی نام اور کاپی رائٹ انہی کتابوں اور اس کے مشمولات کے سلسلے میں غیر قانونی طور پر استعمال کیے گئے، اس طرح مدعی کی کمپنی کے کاپی رائٹ کی خلاف ورزی ہوئی۔


Recent Post

Popular Links