اگنی پتھ اسکیم کے تحت بھرتی اور تربیت میں کوئی تبدیلی نہیں -فوج

RushdaInfotech June 22nd 2022 urdu-news-paper
اگنی پتھ اسکیم کے تحت بھرتی اور تربیت میں کوئی تبدیلی نہیں -فوج

نئی دہلی-21جون (یو این آئی) مسلح افواج نے آج ایک بار پھر واضح کیا کہ تینوں سروس میں اگنی پتھ کے تحت سپاہیوں کی بھرتی کی نئی اسکیم مکمل طور پر پرانی بھرتی کے طریقہ کار سے ملتی جلتی ہوگی اور اس میں کوئی تبدیلی نہیں کی گئی ہے، ساتھ ہی فوج میں رجمنٹ کا نظام بھی برقرار رہے گا-مسلح افواج کی جانب سے یہ بھی کہا گیا کہ یہ کوئی پائلٹ پروجیکٹ نہیں ہے اور اسے شیڈول کے مطابق ہی انجام دیا جائے گا- انہوں نے کہا کہ فورسز کا کل ہند کردار برقرار رہے گا اور پورے ملک میں بھرتی ریلیاں نکالی جائیں گی اور ملک کا کوئی بھی ضلع اس سے اچھوتا نہیں رہے گا-فوجی امور کے محکمے میں ایڈیشنل سکریٹری، لیفٹیننٹ جنرل انیل پوری نے فضائیہ، بحریہ اور فوج کے سینئر افسران کے ساتھ دو دن بعد منگل کو ایک بار پھر میڈیا سے بات چیت کی- انہوں نے اتوار کو بھی اگنی پتھ اسکیم کے بارے میں میڈیا سے بڑے پیمانے پر بات کی تھی-
مسلح افواج نے بھرتی کے عمل کو جلد از جلد شروع کرنے کا روڈ میپ تیار کیا اور کہا کہ جوانوں کی بھرتی کے وقت بھرتی کے معیار میں کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا اور صرف ان امیدواروں کا انتخاب کیا جائے گا جو ہر کسوٹی میں بہترین ثابت ہوں گے - لیفٹیننٹ جنرل پوری نے کہا کہ اگنی پتھ کا منصوبہ وسیع غور و خوض کے بعد سامنے لایا گیا ہے - انہوں نے کہا کہ فوجوں نے 150 میٹنگیں کیں جو 500 گھنٹے جاری رہیں، وزارت دفاع کی سطح پر 60 میٹنگیں ہوئیں جو 150 گھنٹے جاری رہیں، اس کے علاوہ حکومت میں 44 میٹنگیں ہوئیں جو 100 گھنٹے تک جاری رہیں - انہوں نے کہا کہ اگنی پتھ اسکیم کے تحت بھرتی ہونے والے اگنی ویروں کی تربیت بھی موجودہ جوانوں کی طرح ہی ہوگی اور اس میں کوئی تبدیلی نہیں کی گئی ہے - اگنی ویروں کے لیے ہونے والے امتحان کے نصاب میں بھی کوئی تبدیلی نہیں کی گئی ہے اور یہ پہلے کی طرح ہی رہے گا- انہوں نے کہا کہ اسے پائلٹ پروجیکٹ نہیں کہا جا سکتا، کیونکہ فوج ابتدائی چند سالوں میں 40 سے 50 ہزار اور اس کے بعد ہر سال 90 ہزار سے زائد اگنی ویر بھرتی کرے گی-انہوں نے کہا کہ یہ قدم تینوں سروس میں مرحلہ وار طریقے سے کی جانے والی اصلاحات کے عمل کے ایک حصے کے طور پر کیا گیا ہے - ان اصلاحات کی وجہ سے فوج میں کمانڈ آفیسرز کی عمریں سابقہ نظام کے مقابلے میں پانچ سال کم ہو گئی ہیں - ان اصلاحات کے تحت فورسز میں انضمام اور چیف آف ڈیفنس اسٹاف کا عہدہ تشکیل دیا گیا ہے - انہوں نے کہا کہ اگنی پتھ اسکیم کا و احد مقصد فوج کو جوان بنانا اور جوانوں کی اوسط عمر کو 24 سے 26 سال تک لانا ہے -تینوں سروسز کے حکام نے بتایا کہ بھرتی کا عمل آئندہ چند روز میں شروع ہو جائے گا اور دسمبر کے آخر سے اگلے سال جولائی کے آخر تک بھرتی ہونے والے ریکروٹس کی تربیت کا پروگرام تیار کر لیا گیا ہے - اگنی ویروں کی بھرتی کے لیے فوج 80 سے زیادہ ریلیوں کا اہتمام کرے گی-انہوں نے کہا کہ یہ باعث اطمینان ہے کہ ملک کے کئی حصوں سے مصدقہ اطلاعات موصول ہوئی ہیں کہ نوجوانوں نے بھرتی کی تیاری شروع کر دی ہے اور وہ میدانوں میں پسینہ بہا رہے ہیں -


Recent Post

Popular Links