یوکرین- روس تنازع میں شدت- یورپ میں جنگ کاخطرہ بڑھ گیا

RushdaInfotech January 15th 2022 urdu-news-paper
 یوکرین- روس تنازع میں شدت- یورپ میں جنگ کاخطرہ بڑھ گیا

لندن-14جنوری (ایجنسی) پولینڈ کے وزیرخارجہ نے انتباہ کیا ہے کہ یورپ اس وقت اسی طرح جنگ کے قریب پہنچ چکا ہے جیسا کہ وہ 30سال پہلے تھا-ان کا یہ بیان ایک ایسے موقع پرسامنے آیا ہے جب یوکرین اور روس کے معاملے پر جاری تناؤ کم کرنے کیلئے سفارتی کوششیں ہو رہی ہیں - روس کا کہنا ہے کہ وہ کبھی بھی یوکرین کو نیٹو میں شامل ہونے کی اجازت نہیں دے گا-پولینڈ کے وزیرخارجہ زبیگنیو راؤ نے یورپ کی سکیورٹی اور تعاون سے متعلق 57 / ارکان پر مشتمل تنظیم 'او ایس سی ای' کے اجلاس میں تقریر کرتے ہوئے روس کا نام نہیں لیا-تاہم، ان تنازعات کا ذکر کیا جن میں ماسکو مبینہ طور پر ملوث رہا ہے-زیبگنیو کا کہنا تھا کہ ایسا دکھائی دیتا ہے کہ 'او ایس سی ای' کے علاقے میں جنگ کا خطرہ اس سے کہیں زیادہ ہے،جتنا 30 سال پہلے تھا-پولینڈ نیٹو کے ان ممالک میں شامل ہے جو مشرقی یورپ میں روس کے بڑھتے ہوئے سیاسی عزائم کے خلاف نمایاں طور پر مزاحمت کرتے ہیں -جنیوا میں امریکہ کی نائب وزیر خارجہ وینڈی شرمن اور روس کے نائب وزیر خارجہ سرگئی ریابکوف نے یوکرین پر مذاکرات میں حصہ لیا- روس نے یوکرین کی سرحدوں پر اپنے ایک لاکھ سے زیادہ فوجی تعینات کر دیے ہیں، جب کہ یوکرین پہلے ہی اپنے مشرقی حصے میں ان علاحدگی پسندوں کے خلاف لڑ رہا ہے جنہیں ماسکو کی سرپرستی حاصل ہے- روس نے 2014 میں یوکرین کے علاقے کرائمیا پر قبضہ کر لیا تھا- روس کا موقف ہے کہ کرائمیا کے عوام روس کے ساتھ شامل ہونا چاہتے تھے-اس ہفتے ویانا میں جمعرات پہلا ایسا دن ہے جس میں یوکرین اجلاس میں شریک ہو گا، لیکن اس کی شرکت سفیر کی سطح کی ہے جو ایک کم تر سطح ہے- اس سے قبل منگل کے روز جنیوا میں روس اور امریکہ کے درمیان وزارتی سطح کے اور بدھ کو برسلز میں روس اور نیٹو کے درمیان مذاکرات میں کوئی واضح پیش رفت نہیں ہو سکی تھی-امریکہ کے محکمہ خارجہ کے ترجمان نیڈ پرائس نے نامہ نگاروں کو بتایا ہے کہ جمعرات کے اجلاس کے بعد اس میں شامل فریقوں کا بحث ومباحثہ اس بات کا تعین کرے گا آئندہ کیلئے موزوں اقدامات کیا ہوں - پرائس نے بدھ کو کہا تھا کہ امریکہ کو توقع ہے کہ تین اجلاسوں میں شرکت کرنے والے روسی وفود واپس جا کر صدر پوٹن کو رپورٹ کریں گے اور ہم سب کو امید ہے کہ وہ امن اور سلامتی کا انتخاب کریں گے اور انہیں یہ علم ہے کہ ہم اس معاملے میں مخلص ہیں اور سفارت کاری اور بات چیت کو ترجیج دیتے ہیں -
امریکہ اور نیٹو اتحادیوں نے روس پر زور دیا ہے کہ وہ کشیدگی میں کمی لائے اور اس صورت حال کو سفارت کاری کے ذریعے حل کرے- پرائس کا مزید کہنا تھا کہ بدھ کے روز ہم نے انہیں خطرات کم کرنے، شفافیت، رابطے اور ہتھیاروں پر کنٹرول بڑھانے کیلئے تجاویز پیش کیں -امریکہ کی نائب وزیر خارجہ وینڈی شیرمن نے، جنہوں نے برسلز میں امریکی وفد کی قیادت کی ہے، انہوں نے کہا ہے کہ نیٹو اور روس کے درمیان اجلاس ماسکو کیلئے ایک سنجیدہ چیلنج کے ساتھ ختم ہوا کہ وہ کشیدگیاں کم کرے، سفارت کاری کا راستہ اختیار کرے اور اخلاص پر مبنی بات چیت جاری رکھے، تاکہ ہم ایسا حل تلاش کر سکیں جس سے ہم سب کی سکیورٹی میں اضافہ ہو-


Recent Post

Popular Links