کانگریس اقتدار پرآئی تو صفائی کرمچاریوں کے عہدوں کو مستقل کردیاجائے گا سابق میئر وصفائی کرمچاری نارائن پر لکھی کتاب پاؤرا بندھو کے اجراء کے موقع پر سدارامیا کا اعلان

RushdaInfotech November 29th 2021 urdu-news-paper
کانگریس اقتدار پرآئی تو صفائی کرمچاریوں کے عہدوں کو مستقل کردیاجائے گا سابق میئر وصفائی کرمچاری  نارائن  پر  لکھی کتاب  پاؤرا  بندھو کے اجراء کے موقع پر سدارامیا کا اعلان

میسور:28نومبر (پیر پاشاہ۔نامہ نگار) بروز ہفتہ میسور کے مانس گنگوتری میں واقع سینیٹ بھون میں میسوریونیورسٹی کے ا ین راچیااسٹڈی چیر، پولیٹیکل اسٹیڈی چیر اور فیڈریشن آف کرناٹکا اسٹیٹ صفائی کرمچاری اسوسی ایشن کے زیر اہتمام سابق مئیر و صفائی کرمچاری نارائن پر لکھی گئی کتاب پاؤرا بندھوکا اجراء عمل میں آیا۔ سابق ریاستی وزیراعلیٰ سدرامیا نے اس کتاب کا اجراء کیا۔ اس موقع پر میسور یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر ہیمنت کمار، سابق رکن پارلیمان آر دھروانارائن، رکن اسمبلی ایل ناگیندرا اور میسور کے سینئر صحافی و انڈین ایکسپریس کے چیف آف بیورؤ شیو کماراورشعبہ پولیٹیکل سائنس کے صدر شعبہ پروفیسر مظفر اسدی وغیرہ اس موقع پر اسٹیج پر موجود تھے۔ اس موقع پرسدرامیا نے کہا کہ سابق مئیر شری نارائن کو وہ اس وقت سے جانتے ہیں جب وہ صفائی کرمچاریوں کی حمایت میں میسور تعلقہ آفیس کے روبرو احتجاجی دھرنا کررہے تھے اور میں تعلقہ بورڈ کا صدر ہوا کرتا تھا اور بعد میں نارائن میسور سٹی کارپوریشن کے انتخابات میں حصہ لیا اور منتخب ہوگئے۔ اس وقت ریاست میں مئیر، ڈپٹی مئیر، صدور اور نائب صدور کے عہدوں کیلئے ریزرویشن نہیں تھا۔ اس وقت ریاست میں برسر اقتدار کانگریس حکومت نے ریزرویشن کا قانون جاری کیا اور کارپوریٹر و صفائی کرمچاری نارائن میسور کے مئیر منتخب ہوئے تھے۔نارائن نے کبھی خود کیلئے سیاست نہیں کی بلکہ ہمیشہ صفائی کرمچاریوں کے حقوق کیلئے اور انکی فلاح و بہبودی کیلئے جدوجہد کی۔نارائن نے کانگریس میں رہ کر کانگریس پارٹی کی برسر اقتدار حکومت کے خلاف لڑکر کارپوریشن میں کنٹراکٹ پر صفائی کرمچاریوں کے تقرر کے سسٹم کو ختم کروایا۔ حالانکہ نارائن خود ایک صفائی کرمچاری ہیں، سیاست میں داخل ہونے اور اقتدار حاصل کرنے کے باوجود انہوں نے اپنے ساتھی کرمچاریوں کو کبھی نظر انداز نہیں کیا اور اپنے ابتدائی دنوں کو نہیں بھلایاتھا۔ شری نارائن کی ان تھک کوششوں سے کرمچاریوں کی تنخواہوں میں 7000روپئے سے 17,000روپئے تک اضافہ ہوا۔سدارامیانے کہا کہ اگرآئندہ 2023ء میں کانگریس بر سراقتدار آئیگی تو ریاست کے کل 1.20لاکھ صفائی کرمچاریوں کے عہدوں کو ریگیولرائزڈ کردیا جائے گا۔نارائن نے کہا کہ اپنی زندگی میں انہوں نے کبھی خود کیلئے جدوجہد نہیں کی۔ ایک صفائی کرمچاری سے مئیر کے اونچے عہدے تک پہنچنے کے باوجود انہوں نے خود کیلئے کچھ نہیں کیا۔ صفائی کرمچاریوں کے حقوق کیلئے ہمیشہ سے آواز اٹھاتے رہیں گے۔حلقہ چامراجہ کے رکن اسمبلی ایل ناگیندرا نے کہا کہ جب نارائن مئیر منتخب ہوئے توانہوں نے بھارتیہ جنتا پارٹی میں رہنے کے باوجود نارائن کو میئر منتخب کرنے کیلئے اپنا ووٹ دیا تھا، کبھی سیاسی پارٹیوں کو درمیان میں نہیں لایا، برسوں سے ان کی دوستی برابرجاری رہی۔ میسور سٹی کارپوریشن کے 218 کرمچاریوں کو ریگیولرائزڈ کرنے کے سلسلے میں وہ خود وزیر اعلیٰ بسوراج بومئی سے بات کریں گے۔انڈین ایکسپرس کے چیف آف بیورؤ شیوکمار نے اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے کہا کہ نارائن نے مئیر منتخب ہونے کے بعد بھی اپنے ساتھی کرمچاریوں اور انکے مسائل کو نظر انداز نہیں کیا اور برابر جدوجہد جاری رکھی اور صفائی کرمچاریوں کی فلاح و بہبودی کیلئے اپنی کوششیں جاری رکھیں۔اس موقع پر سابق مئیر نارائن اور انکی اہلیہ جئے اما کو تہنیت پیش کی گئی۔ کارپوریٹرس عارف حسین، ایوب خان،اننتو، سابق رکن اسمبلی ا یم کے سوم شیکھر، کے پی سی سی کے ترجمان ایچ اے وینکٹیش، ریٹائرڈ آئی اے ا یس آفیسر ایف بی ابراہیم، اس کتاب کے مصنفین گجیندرا اور ڈاکٹر ہرش کمار وغیرہ اس موقع پر موجود تھے۔


Recent Post

Popular Links