تریپورہ میں طالبانی انداز میں تشددبھڑکانے کی کوشش پرعدالت عظمیٰ برہم بی جے پی رکن اسمبلی کی حرکت پرحکومت نے کیا کارروائی کی؟ سپریم کورٹ کا سوال

RushdaInfotech November 24th 2021 urdu-news-paper
تریپورہ میں طالبانی انداز میں تشددبھڑکانے کی کوشش پرعدالت عظمیٰ برہم  بی جے پی رکن اسمبلی کی حرکت پرحکومت نے کیا کارروائی کی؟ سپریم کورٹ کا سوال

نئی دہلی-23نومبر (یو این آئی) سپریم کورٹ نے منگل کو تریپورہ حکومت سے کہا کہ وہ مقامی بلدیاتی انتخابات میں منصفانہ اور آزادانہ ووٹنگ اور ووٹوں کی گنتی کو یقینی بنانے کے لیے اضافی مرکزی نیم فوجی دستوں کی تعیناتی پر غور کرے -جسٹس ڈی وائی چندر چوڑکی قیادت والی بنچ نے ترنمول کانگریس کی طرف سے دائر توہین عدالت کی درخواست کی سماعت کرتے ہوئے تریپورہ حکومت سے کہا کہ وہ بلدیاتی انتخابات اور ووٹوں کی گنتی کے لیے حفاظتی انتظامات کے سلسلے میں بینچ کو آگاہ کرے -سپریم کورٹ نے تریپورہ حکومت کو حکمراں پارٹی کے ایک رکن اسمبلی کی مبینہ اشتعال انگیز تقریرپر اپنا جواب داخل کرنے کا حکم دیا ہے -ترنمول کانگریس نے الزام لگایا ہے کہ حکمراں پارٹی کے ایک ایم ایل اے نے وزیر اعلیٰ کی موجودگی میں قابل اعتراض اشتعال انگیز تقریر کی تھی-ترنمول کانگریس نے تریپورہ میں اپنے کارکنوں کو تشدد سے بچانے اور ریاستی حکومت کو مناسب سیکورٹی فراہم کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے ایک عرضی دائر کی تھی-مغربی بنگال میں حکمراں ترنمول کانگریس نے توہین عدالت کی درخواست دائر کی تھی جس میں تریپورہ حکومت کے اعلیٰ افسران پر سپریم کورٹ کے احکامات کو نظر انداز کرتے ہوئے ریاست میں امن و امان برقرار رکھنے میں ناکام رہنے کا الزام لگایا گیا تھا-منگل کو درخواست گزار نے”خصوصی تذکرہ“کے تحت کیس کی جلد سماعت کی درخواست کی تھی- تریپورہ میں بلدیاتی انتخابات 25نومبر کو ہونے والے ہیں - الزام ہے کہ اس سلسلے میں تشہیری مہم چلانے والے ترنمول کارکنان کو سیاسی وجوہات کی بنا پر تشدد کا نشانہ بنایا جا رہا ہے اور انہیں جھوٹے مقدمات میں پھنسایا جا رہا ہے -حالیہ واقعات کا حوالہ دیتے ہوئے درخواست گزار نے الزام لگایا ہے کہ اتوار کو تریپورہ پولیس نے اداکار اور ترنمول کانگریس لیڈر سیونی گھوش کے خلاف جھوٹا مقدمہ درج کیا- انتخابی مہم چلانے گئے ترنمول کانگریس کے اس لیڈر پر دو طبقوں کے درمیان نفرت پھیلانے، قتل کی کوشش کرنے سمیت متعدد جھوٹے الزامات لگاتے ہوئے ایف آئی آر درج کی گئی ہے -دوسری جانب تریپورہ انتخابات میں تشدد سے متعلق سماعت کے دوران ترنمول کانگریس (ٹی ایم سی) کی جانب سے سپریم کورٹ کو کچھ تصاویر دی گئیں - ٹی ایم سی کی طرف سے پیش ہونے والے ایڈوکیٹ جے دیپ گپتا نے کہا کہ تریپورہ میں صورتحال بہت سنگین ہے- پولیس موجود ہے لیکن کچھ نہیں کر رہی،صحافی کو مارا گیا ہے- پارٹی رکن سیونی گھوش کے خلاف نعرے لگانے پر ایف آئی آر درج کی گئی تھی- متاثر ہونے کے باوجود انہیں قتل کی کوشش کے الزام کا سامنا ہے- اہم بات یہ ہے کہ سپریم کورٹ تریپورہ انتخابات میں تشدد کے سلسلے میں ٹی ایم سی کی توہین کی عرضی پر سماعت کر رہی ہے- پارٹی نے اپنی توہین عدالت کی درخواست میں کہا ہے کہ سپریم کورٹ کے حکم کے باوجود تریپورہ میں انتخابات کے دوران حالات خراب ہو رہے ہیں، ایسے میں سپریم کورٹ کو تریپورہ کے افسران کے خلاف توہین عدالت کی کارروائی کرنی چاہئے- ٹی ایم سی کے وکیل نے کہا کہ ان کے پاس کئی ویڈیوز بھی ہیں - ووٹر وں کومتاثر کیا جارہا ہے کیونکہ ریاستی مشینری اور پولیس کام نہیں کر رہی ہے- قابل ذکر ہے کہ بلدیاتی انتخابات کے لیے پولنگ 25 تاریخ کو ہے- اس معاملے میں تریپورہ حکومت کی طرف سے پیش ہونے والے وکیل مہیش جیٹھ ملانی نے کہا کہ یہ درخواستیں سیاست سے متاثر ہیں -
ہائی کورٹ اس معاملے پر غور کررہا ہے،جس نے ستمبر میں نوٹس جاری کیا تھا- جیٹھ ملانی نے کہا کہ عرضی گزاروں کی طرف سے ہائی کورٹ میں معاملے کو ملتوی کرنے کا مطالبہ کیا گیا تھا اور اب سپریم کورٹ سے فوری حکم جاری کرنے کا مطالبہ کیا جا رہا ہے-
ٹی ایم سی پر الزام لگاتے ہوئے جیٹھ ملانی نے کہاکہ ہم تعمیلی رپورٹ کے ساتھ تیار ہیں - ان کا کہنا ہے کہ گرفتاریاں نہیں ہو رہی ہیں، ہر واقعے کی ایف آئی آر درج ہو رہی ہے، بعض کیسز میں غیر سنجیدہ ہونے کی وجہ سے گرفتاریاں نہیں ہو رہی ہیں - بڑی عجیب بات ہے، جب عدالتیں چھٹی پر ہوں اور کچھ ہوا ہی نہیں -آج انتخابی مہم کا آخری دن ہے- اچانک کئی واقعات ان کے سامنے آجاتے ہیں - سماعت کے دوران جسٹس ڈی وی ای چندر چوڑ نے تریپورہ حکومت سے پوچھاکہ آج سے ووٹنگ اور ووٹوں کی گنتی تک منصفانہ اور آزادانہ انتخابات کے لیے کیا اقدامات کیے جا رہے ہیں، سکیورٹی کے کیا انتظامات ہوں گے؟جسٹس چندر چوڑ نے کہاکہ تصویر میں دیکھا جا رہا ہے کہ یہ واقعہ ریلی کے دوران پیش آیا- ایسی صورتحال کو آپ کیا کہیں گے؟ ہم منصفانہ اور آزادانہ انتخابات چاہتے ہیں، سپریم کورٹ نے تریپورہ کے وکیل سے کہاکہ بتائیں کہ آج انتخابی مہم، ووٹنگ سے پہلے اور بعد میں اور انتخابی نتائج آنے تک سکیورٹی کے کیا انتظامات ہوں گے- ڈی جی پی اور ہوم سکریٹری کو اس بارے میں تفصیلات دینی چاہئیں، نیم فوجی دستوں کے بارے میں بھی جانکاری دینی چاہئے-


Recent Post

Popular Links