”ہندوستان تباہ ہوجائے گا“ ملک میں لوگوں کو مذہب کے نام پر بانٹنے کا طوفان بپا ہے:ڈاکٹر فاروق عبداللہ

RushdaInfotech October 14th 2021 urdu-news-paper
”ہندوستان تباہ ہوجائے گا“ ملک میں لوگوں کو مذہب کے نام پر بانٹنے کا طوفان بپا ہے:ڈاکٹر فاروق عبداللہ

سری نگر:13/اکتوبر (یو این آئی) نیشنل کانفرنس کے صدر اور سابق وزیر اعلیٰ ڈاکٹر فاروق عبداللہ کا کہنا ہے کہ ملک میں ایک طوفان بپا ہے جس میں لوگوں کو مذہب کے نام پر تقسیم کیا جا رہا ہے۔ان کا ساتھ ہی کہنا تھا کہ اگر اس طوفان کو نہیں روکا گیا تو ہندوستان تباہ ہوجائے گا۔انہوں نے کہا کہ ہمیں مضبوطی کے ساتھ ایک ہوکر طوفانوں کا مقابلہ کرنا چاہئے۔موصوف صدر نے ان باتوں کا اظہار چہارشنبہ کے روز یہاں مقتولہ اسکول پرنسپل سپیندر کور کے گھر پر تعزیت پرسی کے بعد نامہ نگاروں کے ساتھ بات کرنے کے دوران کیا۔انہوں نے کہاکہ سارے ہندوستان میں ایک طوفان بپا ہے اور مسلمانوں، ہندوؤں، سکھوں کو بانٹا جا رہا ہے، بانٹنے کی اس سیاست کو بند کرنا ہوگا اگر اس کو بند نہیں کیا گیا تو ہندوستان بھی نہیں بچے گا۔ ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے کہا کہ کشمیر کبھی بھی پاکستان کا حصہ نہیں بنے گا۔ہمیں متحدہوکر ان درندوں کا مقابلہ کرنا ہے۔ کشمیر بھارت کا حصہ ہے اور حصہ رہے گا، چاہے کچھ بھی ہو جائے۔ کیوں نہ مجھے بھی گولی ماردی جائے۔ان کا مزید کہنا تھاکہ ہمیں حوصلہ رکھنا ہے۔ ان کا مقابلہ کرنا ہے۔ صرف آپ کو نہیں بلکہ ہم سب کو کرنا ہے۔ جب سب بھاگ گئے تو ایک قوم تھی جو یہیں رہی وہ آپ کی تھی۔ ہمیں یہاں رہنا ہے اور یہیں مرنا ہے۔ مجھے آپ پر فخر ہے۔ بعد ازاں فاروق عبداللہ نے نامہ نگاروں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ مسلمانوں، ہندوؤں،سکھوں اور عیسائیوں کو مضبوطی کے ساتھ کھڑا رہنا ہوگا یہی ہماری کامیابی ہے۔


Recent Post

Popular Links