لکھیم پور کا ویڈیو وائرل،اپوزیشن حملہ آور،بی جے پی چراغ پا

RushdaInfotech October 6th 2021 urdu-news-paper
لکھیم پور کا ویڈیو وائرل،اپوزیشن حملہ آور،بی جے پی چراغ پا

لکھنؤ۔5/اکتوبر(یواین آئی) لکھیم پور کھیری میں کسانوں کو روندے جانے کا ویڈیو وائرل ہونے کے بعد اپوزیشن اترپردیش کی یوگی حکومت پر حملہ آور ہوگیا ہے جبکہ حکومت کی جانب سے اب تک کوئی ردعمل سامنے نہیں آیا ہے۔سوشل میڈیا پر وائرل ویڈیو میں دو ایس یو وی گاڑیوں نے پیدل جارہے کسانوں کو پیچھے سے ٹکر ماردی اور روندتے ہوئے نکل گئے۔ کانگریس، سماج وادی پارٹی(ایس پی) اور عام آدمی پارٹی(عاپ) نے وائرل ویڈیو کے ساتھ ٹوئٹ کر کے حکومت سے صفائی طلب کی ہے۔سیتا پور میں پی اے سی لائن میں پولیس حراست میں رہ رہی کانگریس جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی واڈرا نے ٹوئٹ کیا:وزیر اعظم نریندر مودی جی آپ کی حکومت نے بغیر کسی آرڈر اور ایف آئی آر کے مجھے گذشتہ 28گھنٹوں سے حراست میں رکھا ہے۔ کسانوں کو کچل دینے والا یہ شخص اب تک گرفتار کیوں نہیں ہوا ہے۔مرکزی وزیر اجئے مشر ٹینی کی برخاستگی کے مطالبے کے ساتھ ایس پی دفتر نے ٹوئٹ کیا:لکھیم پور میں اقتدار کے نشے میں چور وزیر اجئے مشرا کے بیٹے کے ذریعہ کسانوں کو اپنی جیپ سے کچلنے کا ویڈیو سامنے آیا ہے۔ جانچ میں مشغول سی ایم کی ایس آئی ٹی اب کس بات کا انتظار کررہی ہے۔ فورا ًہی قتل کے ملزم وزیر اور ان کے بیٹے کو گرفتار کیا جائے۔اور مملکتی وزیر کو فوراً برخاست کیا جائے۔
پرینکاگاندھی نے مودی کو ویڈیو بھیجا:کانگریس کی جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی نے ایک ویڈیو پیغام جاری کر کے وزیر اعظم نریندر مودی کو نصیحت کی ہے کہ وہ کسانوں کے درد کو سمجھیں اور گاڑی سے کچل کر کئی کسانوں کو ہلاک کرنے والے وزیر کے بیٹے کو جلد از جلد گرفتار کرائیں۔ خیال رہے کہ پرینکا گاندھی کو اس وقت حراست میں لے لیا گیا تھا جب وہ جان گنوانے والے کسانوں کے اہل خانہ سے ملاقات کرنے کے لئے جا رہی تھیں۔سیتا پور کے پی اے سی سیکنڈ کور کمپلکس میں حراست میں رکھی گئیں پرینکا گاندھی کو پیر کی صبح ساڑھے چار بجے حراست میں لیا گیا تھا۔ قانونی طور پر کسی کو 24 گھنٹے سے زیادہ حراست میں نہیں رکھا جاسکتا لیکن انتظامیہ آگے کے منصوبہ پر منہ نہیں کھول رہی ہے۔پرینکا گاندھی نے اپنے جاری کردہ ویڈیو پیغام میں کہا کہ ”مودی جی نمسکار! میں نے سنا ہے کہ آج آپ آزادی کا امرت اتسو منانے کے لئے لکھنؤ آ رہے ہیں۔ میں آپ سے پوچھنا چاہتی ہوں کہ کیا آپ نے یہ ویڈیو دیکھا ہے۔ یہ ویڈیو آپ کی سرکار کے ایک منتری کے بیٹے کے ذریعہ کسانوں کو اپنی گاڑی سے کچلتے ہوئے دکھاتا ہے۔ اس ویڈیو کو دیکھئے اور دیش کو بتایئے کہ اس منتری کو برخاست کیوں نہیں کیا گیا ہے اور اس لڑکے کو ابھی تک گرفتار کیوں نہیں کیا گیا ہے۔ میرے جیسے حزب اختلاف کے لیڈران کو تو آپ نے حراست میں بغیر کسی آرڈر، بغیر کسی ایف آئی آر کے رکھا ہوا ہے، میں جاننا چاہتی ہوں کہ وہ آدمی آزاد کیوں ہے“۔پرینکا گاندھی نے مزید کہا کہ آج جب آپ امرت اتسو کی محفل میں منچ پر بیٹھے ہوں گے مودی جی، تو آپ یاد کیجئے کہ آزادی ہمیں کسانوں نے دلوائی۔
حکومت زخموں پر نمک چھڑک رہی ہے: کانگریس:کانگریس نے کہا ہے کہ بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی)کی مرکزی اور اتر پردیش حکومت لکھیم پور واقعہ پر زخموں پر مرہم لگانے کے بجائے زخموں پر نمک چھڑک رہی ہے۔ اسے بتانا چاہئے کہ مرکزی وزیر مملکت برائے داخلہ اجے مشرا کو برخاست کیوں نہیں کیا گیا ہے اور واقعہ کے لیے ذمہ دار افراد کے خلاف کارروائی کس وجہ سے نہیں کی جا رہی ہے۔کانگریس کے سینئر لیڈر اور سابق وزیر قانون اشونی کمار نے منگل کو یہاں پارٹی ہیڈ کوارٹر میں ایک پریس کانفرنس میں کہا کہ لکھیم پور واقعہ کسی پارٹی سیاست کے دائرہ کار میں نہیں ہے، بلکہ یہ ملک کی اقدار کا سوال ہے۔ اس معاملے میں معاوضہ کی رقم سے متعلق تشہیر کو غلط قرار دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کسی کی زندگی کا معاوضہ نہیں دیا جا سکتا۔انہوں نے متاثرین کے لواحقین سے اظہار تعزیت کیا اور کہا کہ اتر پردیش اور مرکزی حکومت لکھیم پور کھیری واقعے کے ساتھ بے حسی سے پیش آ رہی ہے۔ سیاسی جماعتوں کے لوگوں کو غمزدہ خاندانوں کے اراکین سے ملنے نہیں دیا جا رہا ہے،یہ انتہائی بدقسمتی کی بات ہے۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی حکومت طاقت کے تکبر سے بھر گئی ہے اور وہ انگریزوں کی طرح برتاؤ کر رہی ہے۔کانگریس لیڈر نے کہا کہ مرکزی وزیر مملکت برائے داخلہ نے اس طرح کا بیان دیا ہے، اسی کے سبب کشیدگی کا ماحول پیدا ہوا ہے۔ ان کا بیان اقتدار کے تکبر کی علامت ہے جس نے ملک کے آئین میں دیئے گئے حقوق کی خلاف ورزی کی ہے۔ انہوں نے سوال کیا کہ ملک کے شہریوں کو گاڑی سے کیسے کچلا جا سکتا ہے اور کیا کسی بھی ہلاک ہونے والے شخص کی زندگی کا معاوضہ دیا جا سکتا ہے؟۔

 


Recent Post

Popular Links