نپاہ وائرس سے بچے کی موت، طبی عملے کے سامنے ایک اورچیلنج

RushdaInfotech September 6th 2021 urdu-news-paper
نپاہ وائرس سے بچے کی موت، طبی عملے کے سامنے ایک اورچیلنج

کوزی کوڈ-5ستمبر (یو این آئی) کیرلا کے کوزی کوڈ میں مہلک نپاہ وائرس سے متاثرہ 12سالہ بچے کی موت کے بعد محکمہ صحت کے عملہ کے سامنے ایک نیا چیلنج پیدا ہوگیا ہے -وزیر صحت وینا جارج نے اتوار کو یہاں صحت اور دیگر عہدیداروں کے ساتھ ایک میٹنگ کے بعد میڈیا کو بتایا کہ مرنے والے بچے کے خون کے نمونے ہفتہ کے روز پونے کے نیشنل انسٹی ٹیوٹ آف ویرولوجی کو بھیجے گئے تھے اورجانچ میں اس کے نپاہ وائرس سے متاثر ہونے کی تصدیق ہوئی- اس سے قبل بچہ کورونا وائرس سے متاثر ہوا تھا اور تیز بخار کی شکایت کے بعد پانچ روز پہلے علاج کیلئے اسپتال میں داخل کرایا گیا تھا-متاثرہ کو میڈیکل کالج اسپتال میں داخل کرائے جانے کے دوران ہی علامات کی پہچان کئے جانے کے تعلق سے پوچھے جانے پر انہوں نے کہا کہ معلوم کیا جائے گا کہ اسپتال کے افسروں نے اس معاملے پر توجہ کیوں نہیں دی اور اسی وقت اس کے نمونے لے کر جانچ کیلئے کیوں نہیں بھیجے گئے -محترمہ جارج نے کہا کہ مرنے والے کے رابطے میں آنے والے افراد کی ایک فہرست تیار کی گئی ہے اور ان کی نگرانی کی جا رہی ہے، حالانکہ ان میں سے کسی میں بھی کوئی علامات ظاہر ہونے کی اطلاع نہیں ملی ہے -
متوفی کے رابطے میں آئے اسپتال کے عملے کوآئیسولیشن میں جانے کیلئے کہا گیا ہے -
قابل ذکر ہے کہ کیرلا میں نپاہ وائرس کا پہلا معاملہ مئی2020میں کوزی کوڈ کے پیرمبرا میں سامنے آیا تھا- ریاست میں اس سے اب تک23/ افراد متاثر ہوئے ہیں اور دو افراد اپنی جان سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں -


Recent Post

Popular Links