یکم ستمبر سے روزانہ 5لاکھ ڈوز ویکسین لگائے جائیں گے۔بومئی

RushdaInfotech August 28th 2021 urdu-news-paper
یکم ستمبر سے روزانہ 5لاکھ ڈوز ویکسین لگائے جائیں گے۔بومئی

بنگلورو۔27/اگست (سالارنیوز) وزیراعلیٰ بسوراج بومئی نے آج کہا کہ ریاست میں یکم ستمبر سے روزانہ5لاکھ ڈوز کووڈ ویکسین لگائے جائیں گے۔اس کے لئے تمام تیاری کرلی گئی گئی ہے۔شہر کے آر ٹی نگر میں اپنی رہائش گاہ میں نامہ نگاروں سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ دورہئ دہلی کے دوران انہوں نے مرکزی وزیر صحت سے ملاقات کرکے کرناٹک کو ہر ماہ ڈیڑھ کروڑ ڈوز کووڈ ویکسین فراہم کرنے کی درخواست کی تھی۔ اس پر وزیر صحت نے رضامندی ظاہر کی ہے۔یکم ستمبر سے ریاست میں روزانہ5لاکھ ڈوزس کووڈ ویکسین دئے جائیں گے۔وزیراعلیٰ نے بتایا کہ روزانہ5لاکھ ڈوز دینے کا سلسلہ شروع ہونے سے ریاست میں اکثر لوگوں کا احاطہ ہوجائے گا۔نیاپارچہ جات پارک: وزیراعلیٰ نے بتایا کہ ریاست میں روزگار کے مواقع بڑھانے کے لئے ریاست میں پارچہ جات پارک کے قیام کی منظوری دینے مرکزی وزیر برائے پارچہ پیوش گوئل سے درخواست کی گئی ہے۔اس کے لئے تجویز روانہ کرکے بہت جلد منظوری حاصل کرلی جائے گی۔ مرکزی وزیر نے بھی منظوری دینے کا تیقن دیا ہے۔اس پارک میں آکر تجارت کرنے بین الاقوامی پارچہ کمپنیوں سے بات چیت بھی کی جائے گی۔ انہوں نے بتایا کہ اس پارک کے قیام سے ریاست میں بڑے پیمانے پر روزگار کے مواقع پیدا ہوں گے۔ریاستی حکومت جلد از جلد اس پارک کے قیام کے لئے مناسب اقدامات کرے گی۔جی ایس ٹی میں توسیع: وزیراعلیٰ نے بتایا کہ دہلی میں وزیر فائنانس نرملا سیتارامن سے ملاقات کرکے جی ایس ٹی کے تحت ریاست کو دئے جانے والے معاوصہ کی میعاد مزید تین سال توسیع کرنے کی درخواست کی ہے۔اس کے علاوہ 15ویں فائنانس کمیشن کی امداد میں اضافہ کرنے کی بھی درخواست کی ہے۔انہوں نے بتایا کہ مرکزی وزیر آبی وسائل سے بھی ملاقات کرکے میکے داٹو، اپر کرشنا پراجکٹ کے تیسرے مرحلہ کی اسکیم پر جلد منظوری دینے کی درخواست کی ہے۔امید ہے کہ اس پراجکٹ پر جلد منظوری مل جائے گی۔
کابینہ میں توسیع: وزیراعلیٰ نے بتایا کہ اس دورہ کے دوران انہوں نے ریاستی کابینہ میں توسیع سے متعلق پارٹی لیڈروں سے کوئی بات چیت نہ ہوسکی۔ اگلی مرتبہ جب وہ دہلی جائیں گے تو ضرور کابینہ میں توسیع سے متعلق مشورہ کریں گے۔انہوں نے بتایا کہ پارٹی کے قومی صدر جے پی نڈا کے اہل خانہ میں سے ایک شخص علیل ہیں، اس وجہ سے نڈا سے ان کی ملاقات نہ ہوسکی۔کابینہ میں ابھی بھی 4قلمدان باقی ہیں۔عنقریب اس سلسلہ میں وہ پارٹی کے سینئر لیڈروں سے مشورہ کریں گے۔


Recent Post

Popular Links