ڈرون مینول ہوئے آسان، لائسنس لینا ہوگا آسان

RushdaInfotech August 27th 2021 urdu-news-paper
ڈرون مینول ہوئے آسان، لائسنس لینا ہوگا آسان

نئی دہلی۔26 اگست (یو این آئی) حکومت نے معاشی ترقی، روزگار کے مواقع اور دور دراز علاقوں میں پہنچ آسان بنانے کی سمت میں ایک قدم اور آگے بڑھاتے ہوئے ڈرون مینول کو آسان کر دیا، جس کے تحت روٹ کا تعین کرنے کے ساتھ ہی ڈرون آپریٹنگ، لائسنس اور دیگر عمل کو آسان بنا دیا گیا ہے۔شہری ہوابازی کی وزارت کی جانب سے جمعرات کو جاری ڈرون مینول 2021 میں بتایا گیا ہے کہ اَن نیمڈ ایئر کرافٹ سسٹم (یو اے ایس) جسے عام طور پر ڈرون کہا جاتا ہے،سے زراعت، کان کنی، بنیادی ڈھانچے کی تعمیر، سرویلانس، ایمرجنسی صورتحال میں کارروائی، ٹرانسپورٹ، میپنگ، دفاعی شعبے میں کافی مدد ملے گی۔ آسان استعمال، متعدد استعمال اور دور دراز علاقوں تک آسان پہنچ کی بدولت ڈرون، روزگار کے مواقع اور معاشی ترقی میں اہم حصہ داری کر سکتا ہے۔ ہندوستان کے پاس 2030تک عالمی ڈرون ہب بننے کی بے پناہ استعداد ہے۔ڈرون ضابطے 2021 کی خصوصیات کا ذکر کرتے ہوئے وزارت نے بتایا کہ اس ضابطے کے بننے سے پہلے تک ڈرون آپریشن کے لیے کئی طرح کی منظوری لینی ہوتی تھی لیکن اب یونیک اتھرائیزیشن نمبر، ڈرون مینوفیکچرنگ اور رکھ رکھاؤ کا سرٹیفکیٹ، درآمد کی منظوری، موجودہ ڈرون کی منظوری، آپریٹر پرمٹ، ریسرچ اینڈ ڈیولپمنٹ تنظیموں کا سرٹیفکیشن، اسٹوڈنٹ ریموٹ پائلٹ لائسنس، ریموٹ پائلٹس کے نگراں کا سرٹیفکیشن کے لیے لی جانے والی منظوریوں کو ختم کر دیا گیا ہے۔ڈرون آپریشن سے متعلق 25 فارم کو کم کرکے پانچ اور پہلے کی 72 طرح کی قیمت کو کم کرکے اب چار کر دیا گیا ہے، جیسے بڑے ڈرون کے لیے ریموٹ پائلٹ لائسنس چارج کو کم کرکے 3000 روپئے اور تمام کٹیگری کے ڈرون کے لیے فیس 100 روپئے کر دیا گیا ہے جو 10 برس تک ویلِڈ رہے گا۔ ساتھ ہی یوزر فرینڈلی سنگل ونڈو سسٹم پر مبنی ڈیجیٹل اسکائی پلیٹ فارم کو فروغ دیا جائے گا۔ اس کے ذریعے سے زیادہ تر منظوریاں ڈیجیٹلی حاصل ہو جائیں گی اور آپریٹرز کو دفاتر کے چکر نہیں لگانے ہوں گے۔


Recent Post

Popular Links