وی کے عبید اللہ اسکول میں لڑکیوں کے پی یو کالج کو جلد منظوری اسکول کا معائنہ کرنے کے بعد وزیر تعلیم بی سی ناگیش کا اعلان،انفراسٹرکچر کی ستائش

RushdaInfotech August 24th 2021 urdu-news-paper
 وی کے عبید اللہ اسکول میں لڑکیوں کے پی یو کالج کو جلد منظوری اسکول کا معائنہ کرنے کے بعد وزیر تعلیم بی سی ناگیش کا اعلان،انفراسٹرکچر کی ستائش

بنگلورو۔23/اگست(سالار نیوز)شہر کے قلب میں آنے والے شیواجی نگر علاقے میں موجود سرکاری وی کے عبید اللہ اسکول کا پیر کے روز ریاستی وزیر برائے بنیاد ی و ثانوی تعلیم بی سی ناگیش نے دورہ کیا۔ اس موقع پر انہوں نے اعلان کیا کہ اس اسکول کے احاطہ میں لڑکیوں کے پری یونیورسٹی کالج کی شروعات کے لئے جلد ہی منظوری دی جائے گی۔ ریاست بھر میں ڈیڑھ سال کے وقفہ کے بعد اسکولس کھولے جانے کے پہلے دن مختلف اسکولوں کا دورہ کرتے ہوئے آخر میں مسٹر ناگیش وی کے عبید اللہ اسکول پہنچے اور انہوں نے اسکول میں طلباء کے لئے کئے گئے انتظامات کا جائزہ لیا۔ اس موقع پر شیواجی نگر کے رکن اسمبلی رضوان ارشد اور اسکول کو گود لینے والے ادارے حضرت حمیدشاہ حضرت محب شاہؒ کی مجلس منتظمہ کے چیرمین جی اے باوا نے وزیر سے گزارش کی کہ اس اسکول کی عالیشان عمارت کے احاطہ میں لڑکیوں کے لئے ایک پری یونیورسٹی کا لج کو کسی دوسری جگہ سے منتقل کرنے کی ایک تجویز حکومت کو پیش کی گئی ہے، اس کو جلد از جلد منظور کیا جائے۔ مسٹر ناگیش نے اس مرحلہ میں اعلان کیا کہ کل ہی ان کی پی یو بورڈ کے ڈائرکٹر اور افسروں کے ساتھ میٹنگ ہے،اس میٹنگ کے دوران وہ کوشش کریں گے کہ اس عمارت میں لڑکیوں کے لئے پی یو کالج کے لئے منظور ی مل جائے۔ رضوان ارشد نے اپنے خطاب میں بتایا کہ وہ اپنے حلقہ میں آنے والے دو اور اسکولوں حفیظیہ اسکول اور تمل اسکول کو ترقی دینے کے منصوبوں پر کام کر رہے ہیں۔ تمل اسکول کو عوامی و نجی اشتراک کے ذریعے ترقی دی جا رہی ہے اور اس کا خاکہ بھی تیار ہو چکا ہے۔ وزیر موصوف نے جمعرات کے روز شیواجی نگر کے دیگر اسکولوں کا بھی دورہ کرنے پر رضامندی ظاہر کی۔ رضوان نے کہا کہ مرکزِ اقتدار ودھان سودھا سے آدھے کلو میٹر سے بھی کم فاصلہ پر واقع شیواجی نگر کے اسکولوں کی حالت انتہائی خستہ ہے، اس کو بہتر بنانے کے لئے ان کی طرف سے سرکاری فنڈس حاصل کرنے کے ساتھ ساتھ دیگر صنعتی اور بڑے تجارتی اداروں کے اشتراک سے ان اسکولوں کے انفراسٹرکچر کو بہتر بنانے کی کوشش کی جا رہی ہے۔ اس موقع پر حمیدشاہ محب شاہؒ درگاہ کمیٹی کے چیرمین جی اے باوا نے اسکول کے طلباء، اساتذہ کے بارے میں تفصیلات اور ادارے کی طرف سے اسکول میں کئے جانے والے انتظامات کے بارے میں اپنے خیر مقدمی خطاب میں روشنی ڈالی اور وزیر سے گزارش کی کہ جلد از جلد پی یو کالج کو منظوری دی جائے۔ اس موقع پر سابق کارپوریٹر سید شجاع الدین، محکمہ تعلیمات کے اعلیٰ افسران وغیرہ موجود تھے۔


Recent Post

Popular Links