غزہ پر اسرائیل وحشت ناک حملہ،200سے زائد فلسطینی شہید،اسپتال سے صیہونی بموں کا نشانہ

RushdaInfotech May 18th 2021 urdu-news-paper
غزہ پر اسرائیل وحشت ناک حملہ،200سے زائد فلسطینی شہید،اسپتال سے صیہونی بموں کا نشانہ

بیت المقدس:17مئی(ایجنسی)غزہ کے رہائشی علاقوں پر غاصب صیہونی حکومت کے جنگی طیاروں کے تازہ حملوں میں متعدد فلسطینی شہید اور درجنوں دیگر زخمی ہو گئے، شہید ہونے والوں میں بچے اور خواتین بھی شامل ہیں۔غاصب صیہونی حکومت نے ہفتے اور اتوار کی درمیانی رات سے اتوار کی صبح تک غزہ کے مختلف رہائشی علاقوں کو ساٹھ سے زائد طیاروں کے ذریعے مسلسل جارحیت کا نشانہ بنایا جبکہ اس کے ان حملوں کا سلسلہ بدستور جاری ہے۔غزہ میں وزارت صحت کے ڈاکٹر اشرف اقدار نے بتایا کہ غاصب صیہونی حکومت کے جنگی طیاروں کے تازہ حملوں میں وسطی غزہ کے وحدہ اسٹریٹ میں بے شمار لوگ شہید ہوئے ہیں جن میں خواتین اور بچے بھی شامل ہیں اور تقریباًکئی زخمی ہوگئے ہیں، جبکہ شہید ہونے والے فلسطینیوں کی تعداد میں مزید اضافہ ہو سکتا ہے کیونکہ بعض زخمی فلسطینیوں کی حالت نازک ہے۔غاصب اسرائیلی فوجیوں کے حملے میں فلسطین میں اب شہدا کی تعداددو سو سے متجاوزہے اور زخمیوں کی تعدادپانچ سو کے قریب پہنچ گئی ہے۔ دریں اثنا شہر الخلیل کے فوجی ٹاور پر تعینات صیہونی فوجیوں نے اتوار کے روز ایک فلسطینی گاڑی پر فائرنگ کر دی جس کے نتیجے میں وجدی ولید جعافرہ نامی ایک فلسطینی شہید ہو گیا۔ غرب اردن کے شہر طولکرم میں بھی ہونے والی جھڑپوں کے دوران صیہونی فوجیوں نے یاسین حسن حمد نامی ایک فلسطینی نوجوان کو گولی مار کر شہید کردیا اس درمیان الاقسام بریگیڈ کے فوجی ترجمان ابوعبیدہ نے غرب اردن کے فلسطینیوں سے اپیل کی ہے کہ وہ اپنی سر زمین کو غاصب صیہونیوں کیلئے جہنم میں تبدیل کر دیں۔انہوں نے مزید کہاکہ اللہ کے فضل وکرم سے ہم نے دشمن ریاست پر حملے کیلئے چھ ماہ تک تیاری کررکھی ہے۔ ادھر فلسطین کی اسلامی مزاحمتی تحریک حماس کے سربراہ اسماعیل ہنیہ نے کہا ہے کہ غزہ، گذشتہ پندرہ برسوں سے شدید محاصرے میں رہا ہے مگر اب اس نے مقبوضہ فلسطین کے شہروں میں صیہونیوں کیلئے عرصہ حیات تنگ کردیا ہے اور صیہونیوں کے زیرقبضہ شہروں میں ہو کا عالم ہے اور استقامتی محاذ کے جوابی میزائلی اور راکٹ حملوں کے باعث غاصب صیہونی اپنے اپنے گھروں اور پناہ گاہوں میں قید ہو کر رہ گئے ہیں۔اسماعیل ہنیہ نے کہا کہ ہم نے سخت انتباہ دیا ہے کہ مسجد الاقصیٰ فلسطینیوں کی ریڈ لائن ہے اور نتن یاہو کو خبردار کر دیا گیا ہے کہ آگ سے کھیلنے کی کوشش نہ کرے اور جب تک ہم مسجد الاقصیٰ اور بیت المقدس کو آزاد نہیں کرا لیتے اس وقت تک چین سے نہیں بیٹھیں گے۔
تنظیم اسلامی کانفرنس کا اجلاس: فلسطین میں جاری اسرائیلی جارحیت کے خلاف اسلامی تعاون تنظیم کا ہنگامی اجلاس ترکی کی بھرپور کوششوں سے وزرائے خارجہ کی سطح پر اور شرکت کیلئے کھلے ویڈیو کانفرنس ہنگامی اجلاس کا انعقاد کیا گیا۔اجلاس میں ترکی نے فلسطینیوں کی حفاظت کیلئے فورس کی تشکیل کی تجویز پیش کی۔ اجلاس کے بعد اسلامی تعاون تنظیم کے سکریٹری جنرل یوسف بن احمد العثیمین نے بیانات جاری کئے ہیں۔عثیمین نے بین الاقوامی برادری سے اپنی اخلاقی، انسانی اور قانونی ذمہ داریوں کو پورا کرنے کی اپیل کی۔انہوں نے اسرائیل سے، فلسطینی عوام، اس کے مقدسات، املاک اور بین الاقوامی قوانین کے تفویض کردہ حقوق پر،حملوں اور منظم خلاف ورزیوں کو بند کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔عثیمین نے کہا ہے کہ حملوں کے ساتھ ساتھ فلسطینیوں کی املاک پر قبضہ کرنے، ان سے اپنی زمینوں کو خالی کرنے کا مطالبہ کرنے کا مطلب ان کے جائز حقوق کا انکار ہے۔ یہ جو کچھ کیا جا رہا ہے امن مرحلے کیلئے کوئی خدمت سرانجام نہیں دے رہا بلکہ اس کے بالکل برعکس مسئلے کے منصفانہ، جامع اور پائیدار حل تک رسائی کی مخلصانہ کوششوں کے راستے میں رکاوٹ بن رہا ہے۔


Recent Post

Popular Links