کووڈ کے حالات پر قابوپانے میں حکومت ناکام:ننجے گوڈا

RushdaInfotech May 4th 2021 urdu-news-paper
کووڈ کے حالات پر قابوپانے میں حکومت ناکام:ننجے گوڈا

مالور۔3/مئی (سالارنیوز)ریاستی حکومت صرف بیان بازی اور باتوں میں ہی وقت ضائع کررہی ہے۔کووڈ کے مریضوں کو سہولتیں فراہم کرنے اور آکسیجن سمیت دیگر ضروری اشیاء کی سربراہی کے معاملے میں پوری طرح ناکام ہوچکی ہے۔حکومت کی اس لاپروائی کے سبب کئی افراد کی جانیں چلی گئی ہیں۔یہ با ت رکن اسمبلی کے وائی ننجے گوڈانے کہی۔انہوں نے یہاں ٹاؤن کے منی ودھان سودھامیں تعلقہ سطح کے افسروں کا اجلاس طلب کرکے کووڈ کے معاملوں میں ہورہے اضافہ کے بار ے میں تبادلہ خیال کیا۔اجلاس میں شرکت کے بعد اخباری نمائندوں سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ کووڈ کے تعلق سے حکومت روزانہ ایک نہ ایک بیان دے رہی ہے اور کووڈ کے معاملات پرقابوپانے کے سلسلے میں وزراء بیان بازی کرتے آرہے ہیں،مگر مریضوں کو کوئی سہولت فراہم نہیں کی گئی ہے۔کئی اسپتالوں میں آکسیجن تو دور بنیادی سہولتیں بھی فراہم نہیں ہیں۔ضلع بھر کے افسر حکومت کی طرف سے اقدامات نہ کئے جانے کی وجہ سے مجبور ہیں اوراپنی بے بسی ظاہر کررہے ہیں۔حکومت کو چاہئے کہ ا س نازک دور میں بغیرتاخیر کئے مریضوں کی جان بچانے کیلئے ضروری اقدامات کرے۔ننجے گوڈانے کہاکہ یہاں کے تعلقہ اسپتال میں صرف 50بیڈ ہیں،ان بیڈوں کی تعداد بڑھانے کے سلسلے میں تاحال ضلع انتظامیہ کی طرف سے اقدامات نہیں کئے گئے۔تعلقوں میں پیش آرہی مشکلات کے بارے میں شکایت کرنے کیلئے کل تک ضلع نگران کا روزیر کا تقر ر عمل میں نہیں لایاگیاتھا۔ریاستی حکومت کی اس ناکامی کے سبب اکسیجن کیلئے پرائیویٹ کمپنیوں کے آگے ہاتھ پھیلانے کی ضرورت پڑی۔رکن اسمبلی نے شدید برہمی ظاہر کرتے ہوئے کہاکہ ضلع کے حالات سے آگاہ کرانے کیلئے وزیر صحت فون تک ریسیوکرنے کیلئے تیار نہیں ہیں۔آئندہ دنوں سرینواس پور کے رکن اسمبلی کے آر رمیش کمار کی قیادت میں ضلع کے تمام اراکین اسمبلی راست طورپر وزیر اعلیٰ سے ملاقات کرکے ضلع کے حالات سے واقف کرانے کا فیصلہ کیاگیاہے۔انہوں نے مزید بتایاکہ تعلقہ کے بھرنی اور رتناکلینک اسپتالوں کو کووڈ ہاسپٹلس کے طور پر تبدیل کرنے کیلئے ان اسپتالوں کے سربراہوں کے ساتھ بات چیت کی گئی ہے،اس سے مزید 50بیڈوں کی سہولت حاصل ہوگی۔انہوں نے مطالبہ کیاکہ سرکاری اسپتالوں کی طرز پر پرائیویٹ اسپتالوں جنہیں کووڈ اسپتال بنایاگیاہے ان اسپتالوں میں کام انجام دینے والے عملہ اور ڈاکٹروں کو بھی لائف انشورنس کی سہولت فراہم کرنی ہوگی۔سرکاری اسپتال میں کام انجام دے رہے 6سے زیادہ نرسوں کی کووڈ رپورٹ پازیٹیو آنے کی وجہ سے مریضوں کی دیکھ بھال کیلئے نرسوں کی قلت پیش آرہی ہے نرسنگ کورس میں تعلیم حاصل کررہے سینئر طلبہ کو اس کام کیلئے استعمال کیاجائے ان کی تنخواہوں کا انتظام وہ خود اپنے صرفہ ئ خاص سے کرنے کیلئے تیار ہیں۔اس موقع پر ٹاؤن منسپل کونسل کے صدر مرلی دھر،تحصیلدار رمیش،تعلقہ ہیلتھ آفیسر ڈاکٹر پرسناکمار،چیف آفیسر نذیر احمد،اسٹانڈنگ کمیٹی کے چیرمین پرمیش اور دیگر موجود تھے۔


Recent Post

Popular Links