کورونا سے نپٹنے کیلئے ایڈی یورپا نے ایک اور ماہرین کمیٹی بنائی سبھی آکسیجن سے آراستہ بستروں کو آئی سی یو بستر میں بدلنے کا فیصلہ: وزیر اعلیٰ کا اعلان

RushdaInfotech May 2nd 2021 urdu-news-paper
کورونا سے نپٹنے کیلئے ایڈی یورپا نے ایک اور ماہرین کمیٹی بنائی سبھی آکسیجن سے آراستہ بستروں کو آئی سی یو بستر میں بدلنے کا فیصلہ: وزیر اعلیٰ کا اعلان

بنگلورو۔یکم مئی(سالار نیوز)کرناٹک میں کورونا وائرس کی روک تھام کے لئے وزیر اعلیٰ بی ایس ایڈی یورپا نے شہر میں نجی اسپتالوں کے ذمہ داروں کے ساتھ ایک میٹنگ کے بعد یہ اعلان کیا ہے کہ حکومت کی رہنما ئی کے لئے ماہرین کی ایک کمیٹی تشکیل دی جائے گی۔ اپنی سرکاری رہائش گاہ کاویری میں نجی اسپتالوں کے انتظامیہ سے میٹنگ کے بعد ایڈی یورپا نے کہا کہ کورونا مریضوں کے علاج کے لئے ڈاکٹر س اور طبی عملہ کی قلت کو دور کرنے کے مقصد سے میڈیکل اور نرسنگ کے طلباء کی خدمات حاصل کرنے پر غور کیا جا رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ میڈیکل میں فائنل ایئر میں زیر تعلیم طلباء کو گریس مارکس دے کر خدمات کے لئے طلب کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کورونا وائرس کو قابو میں کرنے کے مقصد سے ہی حکومت نے ماہرین کی کمیٹی قائم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ وزیر اعلیٰ نے کہا کہ اس بات کی شکایت مل رہی ہے کہ ریمڈیسیور اور آکسیجن کا بے جا استعمال کیا جا رہا ہے، اسے روکنے کے لئے انہوں نے ہدایت جاری کی ہے۔انہوں نے کہا کہ اس پر روک لگانے کے لئے انہوں نے آکسیجن اور ریمڈیسور کے استعمال کے متعلق آڈٹ کرنے کی ہدایت جاری کی ہے۔ انہوں نے میٹنگ کے دوران کہا کہ آنے والے دنوں میں ہوٹلوں کے کمروں کو آکسیجن سے آراستہ بستروں میں تبدیل کرنے کے لئے حکومت کی طرف سے ضروری اقدامات اٹھائے جا رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جن مقامات پر سنٹرالائزڈ آکسیجن کی سہولتوں کے ساتھ بستر موجود ہیں ان تمام بستروں کو وینٹی لیٹر سے جوڑ دیا جائے گا۔ وزیر اعلیٰ نے کہا کہ نرسنگ، فارمیسی اور ہاسپٹل مینجمنٹ کے آخری سال میں زیر تعلیم طلباء کو کووِڈ خدمات پر مامورکیا جائے گا۔ خاص طور پر میڈیکل میں زیر تعلیم طلباء کو کرناٹکا میڈیکل کونسل کے ذریعے رجسٹر کیا جائے گا اور ان کو کووِڈ خدمات پر متعین کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ کورونا کے وہ مریض جن میں کورونا کی علامتیں نہیں ہیں ان کو بھی اسپتالوں میں بھرتی کر دئیے جانے کی شکایات ملی ہیں، اس پر نظر رکھنے اور جن میں علامتیں نہیں ہیں ان کو گھرو ں میں الگ تھلگ کردینے کے لئے ہدایات جاری کی جائیں گی۔ انہوں نے کہا کہ ایسے مریضوں کے علاج کے لئے ٹیلی میڈیسن کے نظام کو مضبوط کرنے پر زو ردیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ میڈیکل کالجوں میں جو بستر آکسیجن سے آراستہ ہیں،ا ن تمام کو آئی سی یو بستروں میں بدلا جا سکتا ہے۔ نجی میڈیکل کالجوں میں آکسیجن کی پیداوار کے لئے پلانٹ تیار کیا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ کورونا کی تیسری لہر کے دوران اس طرح کے بحران کی کیفیت نہ پیدا ہو، اس کے لئے ابھی سے ماہرین کی کمیٹی قائم کردی گئی ہے۔ وزیر اعلیٰ نے اعلان کیا کہ کورونا کے مریضو ں کا علاج کرنے میں لگے عملہ کو حکومت کی طرف سے ملنے والی ترغیبات میں اضافہ کیا جائے گا۔ اگرڈاکٹرس یا طبی عملہ کورونا میں مبتلا ہو جائے تو ان کے علاج کا خرچ حکومت کی طرف سے برداشت کیا جائے گا۔


Recent Post

Popular Links