سرکاری اسپتالوں میں بے قاعدگیوں اور گھپلوں کی تحقیق کا مطالبہ

RushdaInfotech August 12th 2022 urdu-news-paper
سرکاری اسپتالوں میں بے قاعدگیوں اور گھپلوں کی تحقیق کا مطالبہ

کولار:11/اگست (سالارنیوز) رعیت سنگھا کی جانب سے ایک یادداشت محکمہ صحت وخاندانی بہبود کے جنرل سکریٹری ٹی کے انیل کمار کو پیش کرکے مطالبہ کیاگیا کہ ضلع بھر میں سرکاری اسپتالوں کی بے قاعدگیوں کو درست کرکے کووِڈ گرانٹ میں ہوئے گھپلے کے سلسلہ میں تحقیق کی جائے۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے سنگھا کے ریاستی نائب صدر کے نارائن گوڈا نے کہا کہ ضلع بھر کے سرکاری اسپتال کوما میں ہیں، لاکھوں روپئے تنخواہ حاصل کرنے والے ڈاکٹر دیہی علاقوں میں خدمت انجام دینے کی بجائے نجی اسپتالوں میں روپئے بٹورنے میں مصروف ہیں۔ ضلع بھر میں 827نقلی کلینک سرگرم ہیں،لیکن ڈپٹی کمشنر سمیت کسی بھی افسر نے ان کے خلاف کارروائی نہیں کی ہے۔ 26پرائمری ہیلتھ مراکز کی ترقی اور کووِڈ کے دوران کروڑوں روپیوں کا گھپلہ کیاگیا ہے۔ سنگھا کے تعلقہ صدر ایکمبہلی منجوناتھ نے کہاکہ سرکاری اسپتالوں میں برتھ اور ڈیتھ سرٹیفکیٹ حاصل کرنے اور دیگر کاموں کیلئے رشوت خوری عروج پرہے جبکہ اسپتالوں میں بنیادی سہولتیں نہ ہونے سے مریض اور عوام پریشان ہیں۔ یادداشت قبول کرتے ہوئے انیل کمار نے مناسب کارروائی کا تیقن دیا۔ اس موقع پر منگا سندرا تمننا، یرنگٹی گریش، وکلیری ہنومیا ودیگر حاضر رہے۔


Recent Post

Popular Links