سدارامیا کی کانگریس میں شمولیت کے بعدسے دلت لیڈروں کی پارٹی میں کوئی اہمیت باقی نہیں رہی ہے:نارائن سوامی

RushdaInfotech July 4th 2022 urdu-news-paper
سدارامیا کی کانگریس میں شمولیت کے بعدسے  دلت لیڈروں کی پارٹی میں کوئی اہمیت باقی نہیں رہی ہے:نارائن سوامی

ملباگل:3جولائی (سالارنیوز) سابق وزیراعلیٰ سدارامیاکے کانگریس پارٹی میں شامل ہونے کے بعد دلت لیڈروں کی حالت بدتر ہوچکی ہے۔یہ الزام رکن قانون ساز کونسل چلوادی نارائن سوامی نے لگایا۔انہوں نے یہاں شہر کے ٹراولرس بنگلہ میں اخباری نمائندوں سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ جے ڈی ایس سے کانگر یس میں شامل ہونے والے اپوزیشن لیڈر سدرامیاکو وزیر اعلیٰ کے عہدے پر فائز کرکے پچھلے 65سالوں سے پارٹی کیلئے کام کرتے آرہے دلت لیڈروں کو نظرانداز کردیاہے،اپنے آپ کو انصاف پسند کہنے والی کانگریس پارٹی ہر مرحلے میں دلتوں کے ساتھ ناانصافی کرتی آرہی ہے۔مگر بی جے پی نے صدر جمہوریہ کے عہدے سے لے کر ریاستی کابینہ تک دلتوں کو نمائندگی دیتی آئی ہے۔سدارامیاکے کانگریس پارٹی میں شامل ہونے کے بعد سے کانگریس پارٹی میں دلت لیڈروں کی اہمیت گھٹ گئی ہے۔ اگر سدارامیاکو کانگریس پارٹی پلاٹ فارم فراہم نہ کرتی اور وزیرا علیٰ نہ بناتی تو اب تک ریاست میں سدارامیا کو عوام بھول گئے ہوتے۔سابق مرکزی وزیر کے ایچ منی اپا کا کہناہے کہ کانگریس والوں نے ان کے ساتھ دھوکہ کیاہے،اسی طرح ڈاکٹر جی پرمیشور کو وزیر اعلیٰ بننے سے دو مرتبہ روکاگیاہے،اس کیلئے بھی راست سدارامیاہی ذمہ دار ہیں۔ ایک اور دلت خاتون لیڈر سابق ریاستی وزیر موٹمانے بھی افسوس کا اظہار کیاہے کہ سدارامیانے کانگریس پارٹی میں ان کیلئے سارے دروازے بند کردئے ہیں۔سدارامیا کی طرف سے دلتوں کو ختم کرنے کی ایسی کئی مثالیں موجو دہیں۔نارائن سوامی نے مزید کہاکہ ملکارجن کھرگے کے ساتھ بھی ناانصافی ہوئی ہے،اتنی مرتبہ کامیابی حاصل کرنے کے باوجود انہیں وزیراعلیٰ نہیں بنایاگیا۔ان دنوں دلت طبقہ کی طرف سے بی جے پی کی جانب دلچسپی ظاہر کی جارہی ہے،آئندہ اسمبلی انتخابات میں بی جے پی کو 150سے زیادہ سیٹوں پر کامیابی ضرور ملے گی۔کانگریس پارٹی کو آئندہ انتخابا ت میں صرف 60سیٹوں تک ہی محدود رہناپڑسکتاہے۔کانگریس پارٹی کو مضبوط بنانے کیلئے ڈی کے شیوکمار ایڑی چوٹی کا زور لگارہے ہیں،مگر پارٹی انہیں اہمیت نہیں دے رہی ہے۔کانگریس پارٹی کیلئے ہائی کمان سونیاگاندھی یاراہول گاندھی نہیں،بلکہ سدارامیاہائی کمان بن بیٹھے ہیں۔


Recent Post

Popular Links