پرگیہ سنگھ ٹھاکر کی زہرافشانی،کہا ”حجاب اور خضاب مدرسوں میں لگائیں، اسکولوں میں یہ سب برداشت نہیں ہوگا“

RushdaInfotech February 18th 2022 urdu-news-paper
پرگیہ سنگھ ٹھاکر کی زہرافشانی،کہا ”حجاب اور خضاب مدرسوں میں لگائیں، اسکولوں میں یہ سب برداشت نہیں ہوگا“

بھوپال:17فروری(ایجنسی) کرناٹک میں حجاب تنازعہ پر سیاست گرم ہو گئی ہے۔اس دوران مسلمانوں کے خلاف محاذکھولنے والی اور پرامن فضاکو مکدرکرنے والی رکن پارلیمان سادھوی پرگیہ سنگھ ٹھاکر نے کہا کہ ہندوستان میں حجاب پہننے کی ضرورت نہیں ہے۔ جہاں خواتین کا مقام اتنا اعلیٰ ترین ہے وہاں حجاب پہننے کی کیا ضرورت ہے!پرگیہ ٹھاکر نے کہا کہ مدرسوں کے علاوہ اگر کسی دیگر تعلیمی ادارے میں حجاب پہنا جاتا ہے تو اسے برداشت نہیں کیا جائے گا۔ بھوپال سے رکن پارلیمنٹ پرگیہ ٹھاکر برکھیڑا پٹھانی علاقہ کے ایک مندر میں منعقدہ تقریب سے خطاب کر رہی تھیں۔پرگیہ نے کہاکہ آپ کے پاس مدرسے ہیں، اگر آپ وہاں حجاب پہنتی ہیں یا خضاب لگاتے ہیں تو ہمیں کوئی لینا دینا نہیں ہے۔ آپ وہاں کا ضروری لباس پہنتے ہیں اور وہاں کے نظم و نسق پر عمل پیرا ہوتے ہیں لیکن اگر آپ ملک کے اسکولوں اور کالجوں میں نظم و نسق کی خلاف ورزی کرتے ہیں اور حجاب پہننا اور خضاب لگانا شروع کر دیتے ہیں تو اسے برداشت نہیں کیا جائے گا۔پرگیہ ٹھاکر نے بے تکی باتیں کرتے ہوئے کہا کہ پردہ ان لوگوں سے کرنا چاہیے جو ہماری طرف بری نظر رکھتے ہیں۔ یہ بات یقینی ہے کہ ہندو بری نظر نہیں رکھتے۔ یہ سناتن کا کلچر ہے کہ عورتوں کی پوجا کی جاتی ہے۔ ہمارے یہاں جب دیوتاؤں کو بھی ضرورت ہوتی ہے تو دیوی کو شریروں کو مارنے کیلئے پکارا جاتا ہے۔ یہاں ماں اور بیوی کا مقام اہم ترین ہے۔ جہاں خواتین کو اتنا بلند مقام حاصل ہے، کیا وہاں حجاب پہننے کی ضرورت ہے؟ ہندوستان میں حجاب پہننے کی ضرورت نہیں ہے۔


Recent Post

Popular Links