مسلمانوں کیخلاف سماجی بائیکاٹ کی حلف برداری کا ویڈیو وائرل، ملزم گرفتار

RushdaInfotech January 8th 2022 urdu-news-paper
مسلمانوں کیخلاف سماجی بائیکاٹ کی حلف برداری کا ویڈیو وائرل، ملزم گرفتار

رائے پور-7جنوری (ایجنسی)چھتیس گڑھ کا ایک ویڈیو سوشیل میڈیا پر وائرل ہو رہا ہے- اس میں چند لوگ مسلمانوں کے خلاف سماجی بائیکاٹ کا حلف لیتے ہوئے نظر آرہے ہیں جس سے ریاستی انتظامیہ نے بھی معاملہ کی تحقیقات شروع کر دی ہیں - بتایا جا رہا ہے کہ یہ ویڈیو چھتیس گڑھ کے سرگوجا ضلع کا ہے- ویڈیو میں یہاں کے ایک گاؤں کے لوگ یہ حلف لیتے ہوئے نظر آ رہے ہیں کہ وہ مخصوص طبقہ (مسلمانوں) کے ساتھ کسی قسم کا کاروبار نہیں کریں گے اور نہ ہی ان کے ہاتھ اپنی زمینیں فروخت کریں گے-یہ ویڈیو مبینہ طور پر 5 جنوری کو لونڈرا پولیس اسٹیشن کے تحت کنڈی کلاں گاؤں میں شوٹ کیا گیا تھا، جو جمعرات کو منظر عام پر آیا- اس کے بعد پولیس اور انتظامی حکام نے گاؤں کا دورہ کرکے تحقیقات شروع کر دیں - حکام کے مطابق یکم جنوری کو دو گاؤں کے لوگوں کے درمیان جھگڑا ہو گیا- اس کے بعد ہی یہ ویڈیو وائرل ہوا ہے-ویڈیو میں سنا جا سکتا ہے کہ آج سے ہم اس برادری کے کسی دکاندار سے کوئی سامان نہ خریدیں گے اور نہ ہی انہیں اپنا کچھ بیچیں گے، نیز ہم یہ عہد کرتے ہیں کہ ہم ان کو اپنی زمینیں بھی فروخت یا لیز پر نہیں دیں گے- ہم اپنے گاؤں آنے والے دکانداروں سے ان کا پتہ لگانے کے بعد ہی خریداری کرنے کا حلف لیتے ہیں - ویڈیو میں لوگوں کو یہ حلف لیتے ہوئے بھی دیکھا جا سکتا ہے کہ ہم ان کیلئے مزدوری بھی نہیں کریں گے- سرگوجا کلکٹر سنجیو جھا نے جمعہ کو بتایا کہ ویڈیو کے منظر عام پر آنے کے بعد ضلع کے اے ایس پی اور ایس ڈی ایم نے جمعرات کو گاؤں کا دورہ کیا اور واقعہ کے بارے میں دریافت کیا- اس سلسلے میں مزید کارروائی کی جا رہی ہے-سرگوجا اے ایس پی وویک شکلا نے بتایا کہ یکم جنوری کو بلرام پور ضلع کے اررا گاؤں کے لوگ نئے سال کا جشن منانے کنڈی کلاں آئے تھے- اس دوران اس کا کچھ مقامی لوگوں سے جھگڑا ہوگیا- اگلے دن کنڈی کلاں کے لوگوں نے شکایت درج کروائی کہ آررا کی ایک مخصوص برادری کے نصف درجن افراد کے علاوہ اور کچھ دوسرے لوگوں نے ان کے گھر میں گھس کر ان کے ساتھ بدسلوکی کی اور مار پیٹ کی - شکلا نے کہا کہ شکایت کی بنیاد پر چھ لوگوں کو گرفتار کیا گیا تھا، لیکن ان سبھی کو ایک ہی دن مقامی عدالت سے ضمانت مل گئی- انہوں نے کہا کہ ابتدائی طور پر ایسا لگتا ہے کہ واقعہ کا فائدہ اٹھاتے ہوئے کچھ لوگوں نے کنڈی کلاں کے لوگوں کو ایک میٹنگ بلانے اورمسلمانوں کے خلاف ایسی قرارداد لانے پر اکسایا، ہم ان لوگوں کی شناخت کرنے کی کوشش کر رہے ہیں جنہوں نے اجتماعی طور پر مسلمانوں کے خلاف حلف لیا ہے -


Recent Post

Popular Links