سعودی عرب میں تبلیغی جماعت پر پابندی

RushdaInfotech December 12th 2021 urdu-news-paper
سعودی عرب میں تبلیغی جماعت پر پابندی

ریاض:11دسمبر(ایجنسی)سعودی عرب حکومت نے تبلیغی گروپ کو لے کر بڑا قدم اٹھایا ہے۔ سعودی عرب نے اپنے ملک میں تبلیغی جماعت کی انٹری بین کردی ہے۔ اتنا ہی نہیں حکومت نے مساجد کے علماء کو حکم دیا ہے کہ یہ گروپس سماج کیلئے خطرہ ہیں اور مسجدوں میں جمعہ کے خطبے میں اس کے بارے میں لوگوں کو بتایا جائے۔ سعودی عرب کی اسلامی معاملوں کی وزارت نے اس تعلق سے کئی ٹوئٹ کیے ہیں۔سعودی منسٹر فار اسلامک افیئرنے ٹوئٹ کے ذریعے ایسے سارے پوائنٹ کو بتایا جن کی وجہ سے تبلیغی اور دعوہ گروپس کو سعودی عرب کیلئے خطرہ بتایا گیا ہے اور یہ بھی بتایا گیا کہ انہیں کیوں بین کیا جارہا ہے۔ وزارت نے کہا کہ اسلامک امور کے وزیر ڈاکٹر عبدالطیف الشیخ نے مساجد کے مقررین و علماء سے جمعہ کے خطبے میں تبلیغی اور دعوہ گروپس کے بارے میں تفصیلی وارننگ کو شامل کرنے کو کہا ہے۔سعودی وزارت برائے اسلامی امور کے ایک اور ٹوئٹ میں کہا گیا ہے کہ ان گروپس نے لوگوں کو اپنے راستے سے بھٹکایا ہے اور یہ ایک خطرے کا اعلان ہے۔ یہ دہشت گردی کے دروازوں میں سے ایک دروازہ ہے۔ حکومت نے مذہبی مقررین اور علمائے دین سے عوام کو یہ سمجھانے کیلئے کہا ہے کہ انہیں بتایا جائے کہ یہ گروپس کس طرح سے سماج کیلئے خطرہ ہیں۔تبلیغی گروپ کتنا بڑی ہے اس کا اندازہ اسی بات سے لگایا جاسکتا ہے کہ دنیا بھر میں اس کے 350سے 400ملین ارکان ہیں۔ سعودی حکومت کا کہنا ہے کہ ویسے یہ گروپ دعویٰ کرتا ہے کہ اس کا دھیان صرف مذہب پر ہے اور یہ سیاست اور بحث سے دور رہتا ہے لیکن ان کے دعوے پوری طرح کھوکھلے ہیں۔


Recent Post

Popular Links