پرنگی پالیہ میں سرکاری اردو اسکول کی عمارت کا یونس محمد کے ہاتھوں افتتاح

RushdaInfotech April 4th 2021 urdu-news-paper
پرنگی پالیہ میں سرکاری اردو اسکول کی عمارت کا یونس محمد کے ہاتھوں افتتاح

بنگلورو۔3/اپریل(سالار نیوز)شہر کے ایچ ایس آر لے آؤٹ کے قریب آنے والے پرنگی پالیہ میں سرکاری ہائر پرائمری اردو اسکول کے لئے ایک خوبصورت عمارت کی تعمیر کا افتتاح ہفتہ کے روز عمل میں آیا۔ اس عمارت کا افتتاح شہر کی معروف شخصیت یونس محمد سیٹھ، مالک، ایم ڈی گروپ اور نائب صدر سنٹرل مسلم اسوسی ایشن آ ف کرناٹکا کے ہاتھوں عمل میں آیا۔ اس موقع پر اپنے مختصر خطاب میں یونس محمد نے اس اسکول میں زیر تعلیم طلباء کو نصیحت دی کہ وہ بہتر سے بہترتعلیم حاصل کرنے کے لئے جدوجہد کریں اور جو سہولت نئی عمارت میں فراہم کی گئی ہے اس سے بھر پور استفادہ کریں۔ انہوں نے کہا کہ مسلمانوں میں تعلیمی پسماندگی کو دور کرنے کے لئے جو بڑی بڑی کاوشیں ہو رہی ہیں ان میں یہ ایک چھوٹی سی خدمت ہے۔آنے والے دنوں میں اس اسکول کو اور بھی بہتر بنانے کے لئے ہر ممکن تعاون دیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ 15سال سے اس اسکول کے طلباء اور اساتذہ کو کافی مشقتوں سے تعلیم حاصل کرنی پڑی، ان لوگوں نے جب شاہد یونس سے رابطہ کیا تو انہوں نے اس عمارت کی تعمیر کے لئے پہل کی اور تمام مرحومین کے ایصال ثواب کی نیت سے اس عمارت کی تعمیر کی گئی۔اس موقع پر اپنے خطاب میں الماس بابا سیٹھ نے کہا کہ تعلیمی میدان میں آگے بڑھنے کے لئے اس اسکول کے بچوں کو بہتر ماحول مہیا کروانے کے مقصد سے اس عمارت کو بہترین انداز میں تعمیر کیا گیا ہے۔ انہوں نے طلباء کونصیحت دی کہ وہ اس عمارت کا بہتر طریقے سے استعمال کریں۔ اس موقع پر علاقے کے بی آر سی ہریش گوڑا اور دیگرنے بھی خطاب کیا اور اسکول کی تعمیر کے لئے یونس محمد اور ان کی ٹیم کی فراخدلی پر ان کا شکریہ ادا کیا۔ اس موقع پر میڈیا سے گفتگوکے دوران اسحق سیٹھ نے بتایا کہ اس اسکول میں فی الحال 216طلباء زیر تعلیم ہیں۔پر نگی پالیہ کی مسجد حسینیہ کے عقب میں چارمنزلہ عمارت کی تعمیر کی گئی ہے۔انہوں نے بتایا کہ اس چار منزلہ عمارت میں پی یو سی سال دوم تک تعلیم کا انتظام فراہم کرنے کے لئے حکومت سے اجازت لی گئی ہے۔آنے والے دنوں میں اس اسکول میں بارہویں جماعت تک تعلیم کے لئے انتظامات ہوں گے۔اس موقع پر شاہد یونس، صادق سیٹھ، منور سیٹھ،اسکول کی ایس ڈی ایم سی کے ذمہ داران، مقامی عمائدین اور دیگرموجود تھے۔ جلسہ کا آغاز قرأت، حمد و نعت سے ہوا۔


Recent Post

Popular Links