ایک عہدکاخاتمہ:امیرشر یعت مولانامحمدولی رحمانی خالق حقیقی سے جاملے ملت اسلامیہ سوگوار،اہم مذہبی،ملی،دانشوارن اورسیاسی شخصیات کااظہارتعزیت

RushdaInfotech April 4th 2021 urdu-news-paper
ایک عہدکاخاتمہ:امیرشر یعت مولانامحمدولی رحمانی خالق حقیقی سے جاملے  ملت اسلامیہ سوگوار،اہم مذہبی،ملی،دانشوارن اورسیاسی شخصیات کااظہارتعزیت

پٹنہ،3/اپریل(ایجنسی)ہندوستان کی معروف شخصیت مفکراسلام امیرشریعت سابع مولانامحمدولی رحمانی جنرل سکریٹری آل انڈیامسلم پرسنل لاء بورڈوسجادہ نشیں خانقاہ رحمانی مونگیر،مولائے خالق حقیقی سے جاملے۔اناللہ واناالیہ راجعون۔اس کے ساتھ ہی ایک اہم علمی،ادبی،سماجی،سیاسی اورتحریکی باب بندہوگیا۔آپ کے انتقال پرپورے ملک وبیرون ملک میں غم کی لہرہے۔جنازہ کی نماز کل4/اپریل کوخانقاہ رحمانی کے احاطہ میں 11 بجے دن میں اداکی جائے گی۔اس موقع پر متعدد مذہبی،سیاسی اورسماجی شخصیات نے گہرے رنج وغم کااظہار کیا ہے۔ صدر مسلم پرسنل لاء بورڈمولانارابع حسنی ندوی،صدرجمعیۃ مولاناارشدمدنی،مولانا محمود مدنی،امیرجماعت اسلامی ہند سعادت اللہ حسینی،مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کے امیرمولانا اصغر علی امام مہدی سلفی،مولانا خالدسیف اللہ رحمانی،مولاناسعیدالرحمن اعظمی، مولانا ابوالقاسم بنارسی،مولاناعمرین محفوظ رحمانی،ڈاکٹرقاسم رسول الیاس، مولانا خالد رشید فرنگی محلی،مولانا امام حسین رحمانی،مولاناعبدالعلیم فاروقی سمیت اہم شخصیات کے تعزیتی پیغام جاری ہوئے ہیں۔آپؒ کے فرزند مولانااحمدولی فیصل رحمانی نے پیغام جاری کرتے ہوئے کہاہے کہ سخت وقت میں شعائراسلام پرکاربندہونااورصبرکادامن مضبوطی سے تھامے رہناہی ایمان کاتقاضہ ہے۔آپ متعدداداروں کے سربراہ رہے اور کئی پلیٹ فارم سے اہم خدمات انجام دیں،کئی تحریکوں کے روح رواں رہے، مسلم پرسنل لاء بورڈ،امارت شرعیہ،خانقاہ رحمانی کے پلیٹ فارم سے متعد خدمات انجام دیں۔رحمانی فاؤنڈیشن اوررحمانی 30 آپ کی سماجی اورعملی خدمات کی روشن مثالیں ہیں۔آپ کی جرأت ضرب المثل تھی،جرأت وعزیمت والد بزرگوار ؒ سے ورثہ میں ملی تھی۔ان کی اولوالعزمی سے ملت کونئی توانائی اورنیاحوصلہ ملتا۔ رحمانی تھرٹی کے ذریعے آپ نے نئی تعلیمی بیداری پیداکی اوراس کے نتائج ملک بھرمیں محسوس کیے جارہے ہیں۔متعددکتابوں کے مصنف،صحافی،سیاسی اور قانونی امورپردرک رکھنے والے تھے۔ساڑھے 15 لاکھ افرادآپ کے ہاتھ پربیعت ہوئے۔ امیرشریعتؒ ایک ہفتہ پہلے بیمارہوئے۔سانس میں تکلیف کی وجہ سے پٹنہ کے پارس اسپتال میں داخل کرایاگیا جہاں وہ جانبرنہ ہوسکے۔پہلے آئی سی یومیں رہے۔آج صبح طبیعت زیادہ بگڑنے پروینٹی لیٹرپرلے جایا گیا۔ ڈھائی بجے ملت اسلام نے یہ افسوس ناک سانحہ سناجس کے بعدپورے ملک میں انتہائی رنج کی لہردوڑگئی۔امیرشریعت ؒکے دوفرزندہیں۔مولانااحمدولی فیصل رحمانی اورمولانافہدرحمانی۔آپ نے اپنی زندگی میں ہی اپنے بڑے فرزند مولانا احمد ولی رحمانی کی سجادہ نشینی کااعلان کردیاتھااوریہ بھی لکھ دیاتھاکہ چھوٹے فرزند رحمانی30اوررحمانی فاؤ نڈ یشن دیکھیں گے اوربڑے بھائی کی معاونت کریں گے۔ علالت سے عین قبل آپ نے نائب امیرشریعت نوجوان عالم دین مولانا شمشاد رحمانی استاذدارالعلوم وقف کونامزدکردیاتھا۔


Recent Post

Popular Links