صحت مند ہندوستان کے لئے ہمہ جہت حکمت عملی پر کام جاری:مودی

RushdaInfotech February 24th 2021 urdu-news-paper
صحت مند ہندوستان کے لئے ہمہ جہت حکمت عملی پر کام جاری:مودی

نئی دہلی، 23 فروری (یواین آئی) وزیر اعظم نریندر مودی نے آج کہا ہے کہ حکومت صحت مند ہندوستان بنانے کے لئے ہمہ جہت حکمت عملی پر کام کر رہی ہے۔مسٹر مودی نے منگل کو صحت کے شعبے میں بجٹ کے التزامات کو موثر انداز میں نافذ کرنے کے لئے منعقدہ ایک ویبنار سے خطاب کرتے ہوئے ویڈیو کانفرنس کے ذریعے کہا کہ اس سال کے بجٹ میں صحت کے شعبے میں الاٹمنٹ غیر متوقع ہے اور اس سے ہر شہری کو بہتر صحت خدمات فراہم کرنے کے حکومت کے عزم کا اظہار ہوتا ہے۔انہوں نے کہا کہ گذشتہ برس وبا کی وجہ سے کافی مشکل اور چیلنجنگ تھا۔ اس چیلنج پر قابو پانے اور بہت سی جانوں کو بچانے پر خوشی کا اظہار کرتے ہوئے انہوں نے اس کا سہرا حکومت اور نجی شعبے کی مشترکہ کاوشوں کو دیا۔انہوں نے ملک کو صحت مند بنانے کے لئے ہمہ جہت حکمت عملی کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ پہلی حکمت عملی بیماریوں سے بچاؤ اور صحت کو فروغ دینا ہے۔ ایسے اقدامات جیسے کہ سوچھ بھارت ابھیان، یوگا، حاملہ خواتین اور بچوں کی دیکھ بھال اور ان کا علاج جیسے اقدامات اس کے حصے ہیں۔دوسری حکمت عملی غریبوں کو سستا اور موثر علاج مہیا کرانا ہے۔ ایوشمان بھارت اور پردھان منتری جن اوشدھی سینٹر جیسی اسکیمیں اس سمت میں کام کررہی ہیں۔ تیسری حکمت عملی صحت کے بنیادی ڈھانچے اور صحت کی دیکھ بھال کے پیشہ ور افراد کے معیار اور تعداد میں اضافہ کرنا ہے۔ گزشتہ چھ برسوں میں پورے ملک میں ایمس جیسے اداروں کو بڑھانے اور میڈیکل کالجوں کی تعداد بڑھانے کی کوششیں کی جارہی ہیں۔مسٹر مودی نے کہا کہ چوتھی حکمت عملی رکاوٹوں کو دور کرنے کے لئے مشن کے انداز میں کام کرنا ہے۔ مشن اندرا دھنش کو ملک کے قبائلی اور دور دراز علاقوں تک بڑھایا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ملک میں تپ دق کے خاتمے کے 2030 کے ہدف کو پانچ سال کم کرکے 2025 کر دیا گیا ہے۔ وزیر اعظم نے کہا کہ ٹی بی کی روک تھام کے لئے کورونا کے لئے اپنائے گئے پروٹوکول کی طرح روک تھام میں بھی اپنایا جاسکتا ہے کیونکہ یہ بیماری متاثرہ شخص کے ڈراپلیٹ سے پھیلتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ٹی بی کی روک تھام کے لئے ماسک پہننا اور اس بیماری کا جلد پتہ لگانا اور علاج ضروری ہے۔


Recent Post

Popular Links