ملک کی دولت میں مسلمانوں کوبھی حصہ ملناچاہئے ایودھیاکو نہیں، گاؤں میں تعمیرہورہے مندرکوچندہ دوں گا: سدارامیا

RushdaInfotech February 23rd 2021 urdu-news-paper
ملک کی دولت میں مسلمانوں کوبھی حصہ ملناچاہئے ایودھیاکو نہیں، گاؤں میں تعمیرہورہے مندرکوچندہ دوں گا: سدارامیا

منگلور،اڈوپی۔22فروری(سالارنیوز)سابق وزیراعلیٰ واپوزیشن لیڈرسدرامیانے آج یہاں بی جے پی کوسخت تنقیدکانشانہ بناتے ہوئے کہاکہ ایس ڈی پی آئی اورپی ایف آئی بی جے پی کی ”بی ٹیم“ کی مانند ہے۔یہی وجہ ہے کہ بی جے پی ایس ڈی پی آئی اورپی ایف آئی پرپابندی عائدکرنے سے کترارہی ہے۔انہوں نے کہاکہ ان تنظیموں کے خلاف بہت سارے معاملات درج ہیں،اس کے باوجودبی جے پی نے منگلورکے الال میں ؎ پی ایف آئی کی ریلی منعقدکرنے کی اجازت کیوں دی؟اس سے واضح ہوتاہے کہ بی جے پی ہی ایس ڈی پی آئی اورپی ایف آئی کوپروان چڑھارہی ہے۔آج منگلورمیں اخباری نمائندوں سے بات چیت کے دوران انہوں نے کہاکہ ایس ڈی پی آئی کے خلاف بہت سارے کیس درج ہیں۔ایسی حالت میں الال میں پی ایف آئی کی ریلی منعقدکرنے کی اجازت بی جے پی نے دی ہے۔ایس ڈی پی آئی کوپروان بی جے پی چڑھارہی ہے۔ریاست اورمرکزمیں بی جے پی کی حکومت ہے اس کے باوجودان پرپابندی کیوں نہیں لگائی جارہی ہے۔بروزپیر منگلوراور اڈوپی کے دورہ پرآئے ہوئے سدارمیانے پڈوبدری میں کانگریس پارٹی کی جانب سے منعقدہ عوامی آوازپروگرام میں شرکت کرتے ہوئے کہاکہ ایودھیاکے رام بھی دشرتھ کے بیٹے ہیں اسی طرح ہمارے گاؤں کے رام بھی دشرتھ کے بیٹے ہیں۔اس لیے ایودھیامیں تعمیرہورہے رام مندرکی بجائے ہمارے گاؤں میں تعمیرہورہے رام مندرکوچندہ دوں گا۔ انہوں نے بی جے پی والوں سے سوال کرتے ہوئے کہاکہ کیاصرف ایودھیامیں تعمیرہورہے رام مندرکے لیے چندہ دیناچاہئے؟ اورہمارے گاؤں میں تعمیرہورہے رام مندرکوچندہ دینے سے کیابات نہیں بنتی؟۔انہوں نے جذباتی اندازمیں کہاکہ خودمیرے نام میں بھی ”رام“ہے۔انہوں نے کہاکہ رام کے بھگت مہاتماگاندھی کے ہندتوانظریہ کانگریس گامزن ہے۔لیکن بی جے پی گاندھی کے قاتل ساورکرکے ہندتواکے نظریہ پرعمل پیراہے۔انہوں نے عوام سے سوال کرتے ہوئے کہاکہ گاندھی کے قاتل گوڈسے کی پرستش کررہے بی جے پی والے کیاصحیح ہندتواپرعمل کررہے ہیں؟۔ایڈی یورپاجب وزیراعلیٰ بنے تھے تواس وقت چیک کے ذریعہ رشوت لی تھی۔اب ان کے بیٹے وجیندراآرٹی جی ایس کے ذریعہ رشوت لے رہے ہیں۔یہ کہتے ہوئے سدارامیانے وزیراعظم نریندرمودی کے جملہ کااعادہ کیاکہ”ناکھاؤں گاناکھانے دوں گا“ کایہی مطلب ہے؟ سدارامیانے مزیدکہاکہ ریاست میں جب کانگریس برسراقتدارتھی اس وقت راشن کارڈ پر7کلوگرام چاول دئے جارہے تھے۔جب ایڈی یورپا وزیراعلیٰ بنے تو 7کلوگرام چاول کو5کلوگرام تک گھٹادیاگیا۔اب حکومت کے پاس پیسہ نہیں ہے اس لیے پھرایک مرتبہ دوکلوگھٹانے کی کوشش ہورہی ہے۔انہوں نے کہاکہ ایڈی یورپاڈھونگی کسان اولادہے۔ ریاست میں کانگریس دوبارہ اقتدارپرآئی تو راشن کارڈہولڈرس کو10کلوچاول دئے جائیں گے۔انہوں نے کہا کہ ملک کی دولت میں مسلمانوں کوبھی حصہ ملناچاہئے۔میرے دوراقتدار میں اقلیتوں کو3ہزار50 کروڑروپے امدادجاری کی گئی تھی،دوبارہ اقتدار میں آؤں گاتو10 ہزار کروڑ روپے فنڈجاری کروں گا،لیکن بی جے پی والے مختص فنڈ میں بھی کٹوتی کررہے ہیں۔بی جے پی والے دستورہندکے مخالف ہیں،اقلیتوں کے حقوق کی حفاظت نہیں کررہے ہیں۔انسدادگؤکشی قانون ایک مذہب والوں کونشانہ بناتے ہوئے جاری کیاگیاہے۔بیف کھاناان کاغذائی حق ہے،کھانے پینے کے حق میں کوئی مداخلت نہیں کی جانی چاہئے۔ بیف کھانے پرپابندی عائدکرنے بی جے پی والے کون ہوتے ہیں؟انہوں نے کہاکہ بی جے پی والے کہتے ہیں کہ آسٹریلیاسے آنے والے بیف کھاسکتے ہیں۔یہ کیسی منطق ہے؟


Recent Post

Popular Links