ماہرین قانون سے مشورہ کرکے مسئلہ حل کیاجائے گا کے جی ایف کے ایم جی مارکیٹ کے دکانداروں کو وزیر بلدی انتظامیہ ناگراج کا تیقن

RushdaInfotech February 23rd 2021 urdu-news-paper
ماہرین قانون سے مشورہ کرکے مسئلہ حل کیاجائے گا کے جی ایف کے ایم جی مارکیٹ کے دکانداروں کو وزیر بلدی انتظامیہ ناگراج کا تیقن

کے جی ایف۔22فروری (سالارنیوز)شہر کے ایم جی مارکیٹ کی دکانوں کا معائنہ کرنے کے مقصد سے آئے ہوئے ریاستی وزیر برائے بلدی انتظامیہ ایم ٹی بی ناگراج کے خیر مقدم کرنے کیلئے بی جے پی اور کانگریس لیڈروں کے درمیان دھکہ پیل ہوئی اور مارکیٹ میں تھوڑی دیر کیلئے ماحول کشیدہ ہوگیا۔شہر کے سورج مل سرکل پر کے جی ایف اسمبلی حلقہ کے سابق رکن وائی سمپنگی اوران کے حامی وزیر موصوف کا استقبال کرنے کیلئے ایک طرف کھڑے ہوئے تھے۔دوسری طرف موجودہ رکن اسمبلی روپاششی دھر اور رکن کونسل نصیر احمد بھی اپنے حامیوں کے ساتھ وزیر ایم ٹی بی ناگراج کے انتظار میں کھڑے ہوئے تھے۔جیسے ہی ایم ٹی بی ناگراج وہاں پہنچے بی جے پی کارکنوں نے انہیں گھیر لیااس دوران رکن اسمبلی روپاششی دھرنے برہمی ظاہر کی اور بی جے پی کارکنوں سے کہاکہ وزیر موصوف تاجروں کے احوال سننے کیلئے آئے ہوئے ہیں،اطمینان سے دکانداروں سے بات چیت کرنے کا موقع دیاجائے۔مارکیٹ کی ہر گلی کا دورہ کرکے تقریباً 1400 سے زیادہ دکانوں کا معائنہ کرنے والے وزیر موصوف نے کرایہ داروں سے بات چیت کی اور تفصیلی معلومات حاصل کیں۔دکانداروں نے بتایاکہ 40تا50 سالوں سے یہاں تجارت کرتے آرہے ہیں،ایسے میں حکومت اگر ای پرکیورمنٹ کے ذریعہ دکانیں نیلام کرے گی توہمیں دکانیں حاصل کرنا مشکل ہو جائے گا۔اس لئے دکانیں موجودہ کرایہ داروں کوہی دی جائیں۔وزیر موصوف نے رابرٹ سن پیٹ اور آنڈرسن پیٹ میں واقع منسپل کونسل کے کامپلکسوں کا معائنہ کیا۔ایم جی مارکیٹ کی نیلامی کی کارروائی کے تعلق سے رکن اسمبلی روپا ششی دھر اور رکن کونسل نصیر احمد نے ایوان میں معاملہ اٹھایاہے اورٹینڈر کی کارروائی پر روک لگاکر موجودہ کرایہ داروں کوہی دکانیں فراہم کرنے کا مطالبہ کیاہے۔اس کے پیش نظر یہاں کا معائنہ کرنے اور ایم جی مارکیٹ کے کرایہ داروں سے بات چیت کرنے کے مقصد سے یہاں آیاہواہوں تمام تفصیلات جاننے کے بعد حتمی فیصلہ کیاجائے گا۔وزیر موصوف نے کہاکہ اعلیٰ افسروں کے ساتھ بات چیت کرکے قانون کے دائرہ میں رہ کر مسئلہ حل کرنے کی ہر ممکن کوشش کریں گے۔ مارکیٹ کادورہ کرکے جائزہ لینے کے بعد وزیر موصوف نے سٹی منسپل کونسل کے میٹنگ ہال میں افسرو ں اور عوامی نمائندوں کا اجلاس طلب کیااو ر کہاکہ ایم جی مارکیٹ کا معاملہ حکومت کے اڈوکیٹ جنرل کے سامنے پیش کیاجائے گا۔ایم جی مارکیٹ کی دکانیں فراہم کرنے قانونی مشورے کی ضرورت ہے،حکومت کی طرف سے مقرر کردہ کرایہ اور اڈوانس کی رقم اداکرنے تیار رہنے کی بات دکانداروں نے کہی ہے۔حکومت کی سطح پر اس معاملے میں بات چیت کرکے فیصلہ کیاجائے گا۔وزیر موصوف نے کہاکہ ریاست بھر میں کے جی ایف سٹی منسپل کونسل کا معاملہ الگ ہے۔منسپل کونسل کی طرف سے زمین کے کرایے کی بنیاد پر دی گئی زمین پر دکانداروں نے عمارت تعمیر کرکے کاروبار کرتے آرہے ہیں۔ پچھلے 60سالوں سے معاملہ حل نہیں ہوسکاہے،دکانیں انہی کرایہ داروں کو دینے کا قانون میں موقع نہیں ہے،ایک طرف عدالت کے حکم کی تعمیل ضروری ہے دوسری طرف پچھلے کئی دہوں سے کاروبار کرتے آرہے ان کرایے داروں کے ساتھ ناانصافی نہ ہو اس کا بھی خیال رکھناہے۔اس لئے ماہرین قانون سے مشورہ کرکے مسئلہ حل کیاجائے گا۔ا س موقع پر رکن پارلیمان ایس منی سوامی،رکن اسمبلی روپاششی دھر،رکن کونسل نصیر احمد نے بھی ایم جی مارکیٹ کا مسئلہ حل کرنے اور دکانداروں کے ساتھ ناانصافی ہونے نہ دینے کی گزارش کی۔اس موقع پر ڈی ایم اے کی آفیسر بی بی کاویری،سابق رکن اسمبلی وائی سمپنگی،کے جی ایف اربن ڈیولپمنٹ اتھارٹی کی چیرپرسن اشوینی کے علاوہ دیگر آفیسرس موجود تھے۔


Recent Post

Popular Links