کووڈشیلڈویکسین کے 6.48لاکھ ڈوزموصول ہوگئے: سدھاکر سائڈایفکٹ کا امکان بالکل نہیں ہے،تشویش میں مبتلا ہونے کی ضرور ت نہیں

RushdaInfotech January 13th 2021 urdu-news-paper
کووڈشیلڈویکسین کے 6.48لاکھ ڈوزموصول ہوگئے: سدھاکر سائڈایفکٹ کا امکان بالکل نہیں ہے،تشویش میں مبتلا ہونے کی ضرور ت نہیں

بنگلور۔12جنوری (سالارنیوز) ریاست میں پہلے مرحلہ میں 54باکسوں میں 6.48 لاکھ ڈوزکوروناویکسین موصول ہوئی ہے۔یہ اطلاع ریاستی وزیربرائے صحت وطبی تعلیم ڈاکٹر سدھاکرنے دی۔کوروناویکسین آنندراؤ سرکل پرواقع ذخیرہ اندوزی مرکز آ نے کے بعد اخباری نمائندوں سے بات چیت کے دوران انہوں نے کہاکہ کوروناویکسین کے 6.48لاکھ ڈوزپرمشتمل 54بکس موصول ہوئے ہیں۔ تمام ڈوز نہایت عمدگی سے پیک ہوکرآئی ہیں۔ ایک مخصوص درجہ حرارت میں لائے گئے ویکسین ذخیرہ اندوزمرکزمیں رکھے گئے ہیں۔کل بروز چہارشنبہ بیلگاوی کو1.40لاکھ ویکسین ڈوزموصول ہوں گی۔اس پرمیں وزیراعلیٰ ایڈی یورپا اوروزیر اعظم نریندرمودی سے اظہار تشکرکرتاہوں۔ آتم نربھر (خودکفیل) بھارت کے تصورساتھ مودی حکومت کی جانب سے مختلف فارما کمپنیوں کاتعاون کئے جانے کی بناپرآج ہمیں صرف 210روپئے میں کوروناویکسین دستیاب ہورہی ہے۔کورونا کی روک تھام میں جن لوگوں نے جدوجہدکی ان تمام اہلکاروں کو16جنوری سے کورونا ویکسین کی ٹیکہ دیاجانے کاپروگرام ترتیب دیا جارہاہے اس کے لیے درکار رہنماخطوط جاری کئے جائیں گے۔انہوں نے کہاکہ مزیدچار کمپنیاں ویکسین تیارکرنے والی ہیں۔وہ ویکسین دستیاب ہونے کے بعدزیادہ سے زیادہ لوگو ں کو ویکسین دیناممکن ہوپائے گا۔انہوں نے کہاکہ ویکسین کومحفوظ طریقہ سے لاتے ہوئے اسٹور کرنے کا تجربہ ہمارے اہلکاروں کوحاصل ہے۔ محکمہ صحت کے اہلکاروں کے معاملہ میں کوئی غیریقینی صورتحال کاشکارنہ ہو،تمام سرگرمیاں اصول وقواعدکے مطابق انجام دی جارہی ہیں۔ انہوں نے کہاکہ 2لاکھ سے زائد اہلکارویکسین دیں گے،ان تمام کوتربیت دی جارہی ہے، سائدافیکٹ کاامکان بالکل نہیں ہے، اس کے باوجود پیشگی احتیاط کے طورپرویکسین دینے کے مقام کی نگرانی کے لیے علاحدہ انتظام کیاگیاہے،ویکسین کا باکس بہت وزنی ہے، ایک اہلکار کے ہاتھ سے پھسل گرنے کے باوجودویکسین اورباکس کوکچھ نہیں ہوا،اس لیے اس بارے میں کسی کوتشویش میں مبتلا ہونے کی چنداں ضرورت نہیں ہے۔قبل ازیں سیرم انسٹی ٹیوٹ پونے سے منگل کے روز صبح تین ڈگری کنٹرولڈ درجہ حرارت والے ٹرک سے کووڈشیلڈ ویکسین کی پہلی کھیپ پونے ہوائی اڈے روانہ کی گئی جہاں سے ان ویکسین کو ملک کے مختلف حصوں میں بھیجا گیا۔ ملک میں اس وبا کے خلاف فیصلہ کن جنگ کا پہلا مرحلہ صبح تقریباً پانچ بجے تین ڈگری کنٹرولڈ درجہ حرارت والے ٹرک سے کووڈشیلڈ ویکسین کی پہلی کھیپ پونے ہوائی اڈے کے لیے روانگی کے ساتھ شروع ہوا۔ قومی سطحی ٹیکہ کاری کی مہم چار دنوں کے بعد شروع ہوگی۔ذرائع کے مطابق ٹرک سے ویکسین کے کل 478 باکسوں کو بھیجا گیا ہے۔ منجری سے ٹرک سیرم انسٹی ٹیوٹ آف انڈیا کے احاطے سے صبح نکلا اور 15 کلومیٹر دور واقع ہوائی اڈے کے وقت پہنچ گیا ہے۔ ہوائی اڈے سے 10 بجے ملک کے مختلف 13 مقامات کے لیے ویکسین کو بھیجا گیا۔ ٹرک میں لدے ویکسین کو بھیجنے سے قبل ٹرک کی پوجا کی گئی۔


Recent Post

Popular Links