آزادی کے بعد بجٹ دستاویز پہلی بار غیر مطبوع وزیر خزانہ سافٹ کاپی سے کریں گی تقریر

RushdaInfotech January 12th 2021 urdu-news-paper
آزادی کے بعد بجٹ دستاویز پہلی بار غیر مطبوع   وزیر خزانہ سافٹ کاپی سے کریں گی تقریر

نئی دہلی-11جنوری (ایجنسی)آزادی1947 کے بعد سے ہر سال طبع ہوتے آرہی بجٹ دستاویز پر بھی کورونا کا سایہ پڑگیاہے، اس باروائرس کے خوف سے بجٹ 22-2021کی دستاویزات نہیں چھاپی جا رہی ہیں،اس کیلئے حکومت کو لوک سبھا کے اسپیکر اور راجیہ سبھا کے چیئرمین کی منظوری مل گئی ہے- تمام ممبران پارلیمنٹ کو اس بار بجٹ کی دستاویزات کی سافٹ کاپی فراہم کی جائے گی-اس صورتحال میں اس بار بجٹ کے دن پارلیمنٹ کے باہر دستاویزات دیتے ٹرک ندارد ہوں گے- وزارت خزانہ کے پرنٹنگ پریس میں ہر سال مرکزی بجٹ کی طباعت کی جاتی رہی ہے- وزارت خزانہ نے کہا کہ بجٹ دستاویزات کی طباعت کیلئے100 سے زائد افراد کو دو ہفتوں کیلئے ایک جگہ رکھنا ہوگا، کورونا کے پیش نظر حکومت اتنے زیادہ لوگوں کو پرنٹنگ پریس میں اتنی مدت تک نہیں رکھ سکتی - ذرائع کے مطابق لوک سبھا اسپیکر اور ڈپٹی اسپیکر کو سافٹ کاپی کیلئے ممبران پارلیمنٹ کو راضی کرنے میں مشقت کرنی پڑی - بجٹ دستاویزات کے حوالے سے دو اختیارات وضع کئے گئے تھے- تمام ممبران پارلیمنٹ کو سافٹ کاپی دی جائے یا کوئی نہیں - ایک ہی وقت میں ممبران پارلیمنٹ کیلئے محدود تعداد میں کاپیاں ممکن نہیں تھیں جو ٹیک سیوی نہیں ہیں، ان کیلئے دلیل دی گئی کہ اگر دستاویزات چھاپی گئیں تو ان میں کورونا انفیکشن کا خطرہ ہے-
مرکزی بجٹ سب سے پہلے26نومبر 1947کو آزاد ہندوستان میں پیش کیا گیا تھا- اس کی دستاویزات اس کے بعد سے ہر سال طبع کی جاتی رہی ٖہیں -


Recent Post

Popular Links