کرناٹک میں اسکولوں کے کھلنے کے بعد271/اساتذہ کورونا متاثر

RushdaInfotech January 10th 2021 urdu-news-paper
کرناٹک میں اسکولوں کے کھلنے کے بعد271/اساتذہ کورونا متاثر

بنگلور۔9/جنوری (یو این آئی) کرناٹک میں گزشتہ اسکولوں کے پھر سے کھلنے کے بعد کم از کم 271 /اساتذہ کورونا وائرس سے متاثر پائے گئے اور اس میں غیر تدریسی عملہ کو جوڑا جائے تو متاثرین کے اعداد و شمار 300سے زیادہ ہو گئے ہیں۔صحت اہلکاروں نے ہفتے کے روز بتایا کہ حکومت نے تعلیمی اداروں کو پھر سے کھولنے سے قبل تمام اساتذہ اور غیر تدریسی عملے کے لیے کورونا ٹسٹ کو لازم کر دیا ہے۔ شمالی کنڑ اضلع میں اساتذہ اور غیر تدریسی عملہ سمیت 20 /افراد کورونا سے متاثر پائے گئے ہیں جبکہ بیلگاوی میں 19 /اساتذہ اور چھ غیر تدریسی عملہ میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوئی ہے۔ شیموگہ، ہاسن اور منڈیا اضلاع میں 39 اساتذہ کورونا پازیٹیو پائے گئے جبکہ ٹمکورو، میسورو، چامراج نگر اور گدگ اضلاع میں دو غیر تدریسی عملہ سمیت 45 /اساتذہ کورونا سے متاثر پائے گئے ہیں۔ ریاست کے چِکبالاپور، بلاری اور مدھوگری اضلاع میں کوئی بھی اساتذہ یا غیر تدریسی عملہ عالمی وبا کی زد میں نہیں آیا ہے۔ غورطلب ہے کہ مارچ 2020 میں کورونا وبا کے سامنے آنے کے بعد نافذ لاک ڈاؤن کے سبب ریاست میں تمام اسکول گزشتہ نو ماہ سے بند تھے۔
ریاست میں گذشتہ یکم جنوری سے 10 ویں اور 12ویں کلاسز کی پڑھائی کے لیے اسکولوں کو پھر سے کھول دیا گیا۔ طلبہ کو درجہ حرارت، فیس ماسک لگائے رہنے اور ہاتھوں کو سینیٹائز کرنے کے بعد ہی اسکولوں میں داخلہ کی اجازت دی جا رہی ہے۔ اسکولوں میں کلاس میں شرکت کرنے والے طلبہ سے کہا گیا ہے کہ وہ اپنے والدین یا گارجین کا راضی نامہ بھی ساتھ لے کر آئیں۔ گیارہویں جماعت کے طلبہ کے 15 جنوری سے بہ ضابطہ کلاس میں شامل ہونے کا امکان ہے۔ کلاس چھٹی سے نوویں کے طلبہ کے لیے ودیاگم یوجنا بھی جلد شروع ہونے کی امید ہے۔ ٹیکنیکل صلاح کار کمیٹی اور محکمہ صحت کی ہدایت پر اسکولوں کو پھر سے کھولا جا رہا ہے۔ اس درمیان نو ماہ کے وقفے کے بعد پہلے اور دوسرے سال کے کالج طلبہ کے بہ ضابطہ کلاس 14 جنوری کے بعد شروع ہو جائیں گے۔ ریاست کے نائب وزیراعلیٰ اور وزیر تعلیم ڈاکٹر سی این آشوت نارائن نے اس تجویز کا اعلان کیا۔ انہوں نے سرکاری اور پرائیویٹ یونیورسٹیوں کے وائس چانسلر اور محکمہ اعلیٰ تعلیم سمیت مختلف محکموں کے افسران سے کہا کہ وہ کلاس پھر سے شروع کرنے کے لیے تاریخ کا مشورہ دیں۔ مسٹر نارائن کی جانب سے جمعہ کے روز بلائی گئی میٹنگ میں وائس چانسلروں نے حصہ لیا تھا اور سبھی اس بات پر متفق تھے کہ حکومت کو آن لائن کلاسز شروع کر دینی چاہیے۔ انہوں نے سبھی سے کہا کہ وہ کلاسز شروع کرنے کے لیے تاریخ بتائیں تاکہ کلاسز شروع کرنے کا اعلان کیا جا سکے۔ یہ ڈگری، گریجویشن، ڈپلومہ اور انجینئرنگ کے سال اول اور سال دوم کے طلبہ پر نافذ ہوگا۔ کلاس 10، 12 ویں آخری سال کی ڈگری اور گریجیوشن طلبہ کے لئے آف لائن یا با ضابطہ کلاسز پہلے ہی شروع ہو چکی ہیں اور کامابی سے چل رہی ہیں۔ اس کامیابی کو دھیان میں رکھتے ہوئے، باقی کلاسز کو بھی کھولنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔


Recent Post

Popular Links