کلبرگی جیل میں تین سال کی بچی کی موت سڑک پر لاش رکھ کر احتجاج، پی ایس آئی کو برخاست کرنے کا مطالبہ

RushdaInfotech January 4th 2021 urdu-news-paper
کلبرگی جیل میں تین سال کی بچی کی موت سڑک پر لاش رکھ کر احتجاج، پی ایس آئی کو برخاست کرنے کا مطالبہ

کلبرگی 3 جنوری (سالار نیوز) کرناٹک کے کلبرگی ضلع میں پنچایت انتخابات میں ہوئی جھڑپ کے بعد عدالتی تحویل میں سنٹرل جیل بھیجی گئی ماں کے ساتھ رہ رہی تین سال کی بچی کی اتوار کو موت ہوگئی۔سرکاری ذرائع کے مطابق منگل کو جیورگی تعلقہ کی جینپورا گرام پنچایت انتخابات میں ہوئی اجتماعی جھڑپ کے بعد بچی بھارتی کی ماں کو عدالتی تحویل میں کلبرگی سنٹرل جیل بھیج دیا گیا تھا۔ بچی کوحراست میں نہیں لیا گیا تھا لیکن ماں کے ساتھ رہنے کی اجازت دی گئی تھی۔ بچی جیل میں ہی بیمار ہوگئی تھی۔واقعہ پر ردعمل کا اظہارکرتے ہوئے ضلعی سپرنٹنڈنٹ پولیس سمی مریم جارج نے کہا کہ بچی کو گرفتار نہیں کیا گیا تھا، اسے صرف اپنی ماں کے ساتھ سنٹرل جیل میں رہنے کی اجازت دی گئی تھی۔انہوں نے یہ بھی کہا کہ جیل یاپولیس تھانے میں بچی کی موت نہیں ہوئی ہے۔ واقعہ کی تحقیقات کی جارہی ہے۔کلبرگی سنٹرل جیل میں تین سالہ بچی کی موت نے تنازعہ کی شکل اختیار کرلی ہے۔ بچی کی ہلاکت پر شدید غم و غصہ پایا جاتا ہے۔ جیل میں اس بچی کی موت کے واقعہ کی مذمت کرتے ہوئے کلبرگی میں سڑک پر بچی کی لاش کورکھ کر احتجاج کیا گیا۔ احتجاجی مظاہرہ میں اسمبلی کے چیف وہپ اجے سنگھ سمیت متعدد رہنماؤں نے حصہ لیااوراحتجاجیوں نے پی ایس آئی منجوناتھ ہوگر کو برخاست کرنے کا مطالبہ کیا۔ خودایس پی نے جائے احتجاج آکراحتجاجیوں کومنانے کی کوشش مگراحتجاجی وہاں سے ہٹنے پرراضی نہیں ہوئے۔


Recent Post

Popular Links