میرا گھر جلاہے اس لئے تنہا جدوجہد کرتا رہوں گا:اکھنڈاسرینواس

RushdaInfotech December 4th 2020 urdu-news-paper
میرا گھر جلاہے اس لئے تنہا جدوجہد کرتا رہوں گا:اکھنڈاسرینواس

بنگلورو3دسمبر(سالار نیوز)شہر کے ڈی جے ہلی اور کے جی ہلی تشدد کے دوران شرپسندوں نے میرا گھر جلایا ہے اس لئے انصاف کی لڑائی میں تنہا ہی جاری رکھوں گا اس لڑائی میں کانگریس پارٹی میرا ساتھ دے یا نہ دے لیکن جن لوگوں نے میرا گھر، دو پولیس تھانے، متعدد عوامی املاک کو آگ لگادی اور چار بے قصوروں کی جانیں ضائع کیں اور ان کی وجہ سے سینکڑوں بے قصور نوجوان سلاخوں کے پیچھے پہنچ گئے ان عناصر کے خلاف میں اپنی لڑائی جا ری رکھوں گا۔ یہ بات پلیکیشی نگر حلقہ کے رکن اسمبلی آر اکھنڈا سرینواس مورتی نے کہی۔ اس کیس کے سلسلہ میں کارپوریٹر اے آر ذاکر کی گرفتار ی کے بعد رد عمل ظاہر کرتے ہوئے سرینواس مورتی نے پولیس کی طرف سے کی گئی کارروائی پر پولیس حکام کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ ان تمام کلیدی ملزمین کی گرفتاری سے اس معاملہ کی سچائی سامنے آنے کی پوری امیدہے۔ انہوں نے کہا کہ سمپت راج کو کانگریس پارٹی سے معطل کرنے کے لئے انہوں نے کے پی سی سی صدر ڈی کے شیو کمار سے مانگ کرتے ہوئے حال ہی میں ان سے ملاقات کی۔ اس مرحلہ میں انہوں نے یقین دلایا تھا کہ معاملہ کو وہ کے پی سی سی کی تادیبی کارروائی کمیٹی کے سپرد کریں گے لیکن انہیں نہیں لگتا کہ اب تک معاملہ تادیبی کمیٹی کے حوالے کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کے پی سی سی صدرنے اگر اس سلسلہ میں کوئی قدم نہیں اٹھایا تو وہ اس سلسلہ میں اے آئی سی سی کو مکتوب روانہ کریں گے۔ انہوں نے مزید کہا کہ اس معاملے میں جو بھی خاطی ہیں ان کو سخت سزا ملنی چاہئے۔ اس سوال پر کہ کیا وہ اسی بات کو بنیاد بنا کر کانگریس چھوڑ دیں گے سرینواس مورتی نے کہا کہ کسی بھی حال میں ان کی طرف سے کانگریس چھوڑ نے کا سوال ہی نہیں اٹھتا۔ حلقہ میں عوام اور کانگریس کے تمام کارکنوں کی حمایت سے انہوں نے ریاست بھر میں سب سے زیادہ برتری سے کامیابی حاصل کی ہے اس لئے ان کا کانگریس چھوڑ دینے کا کوئی ارادہ نہیں۔ انہوں نے کہا کہ وہ ان کے والد کے دور سے کانگریس میں ہیں ان کے والد اس علاقہ کی بلاک کانگریس صدر رہے اس وقت سے وہ کانگریس سے جڑے ہوئے تھے درمیان میں ناگزیر وجوہات کے سبب انہوں نے جے ڈی ایس میں شمولیت اختیار کی اور اس پارٹی سے وہ پہلی بار علاقہ کے رکن اسمبلی بنے اس کے بعد سابق وزیر اعلیٰ سدارامیا اور سابق وزیر ضمیر احمد خان کی قیادت میں انہوں نے کانگریس میں شمولیت اختیار کی اوراب وہ اسی پارٹی میں بنے رہیں گے۔ بی جے پی کے سینئر لیڈر اروند لمباولی سے ان کی بار ہا ملاقاتوں کے بارے میں ایک سوال پر سرینواس مورتی نے کہا کہ لمباولی چونکہ ان کے رشتہ دار ہیں اس لئے ان سے ملاقاتیں ہوتی ہیں اس کے علاوہ ان ملاقاتوں کا کوئی سیاسی مقصد نہیں۔


Recent Post

Popular Links