بینک مصیبت میں، مہنگائی و بے روزگاری بے قابو یہ ’وکاس‘ ہے یا ’وِناش‘: راہل گاندھی

RushdaInfotech November 19th 2020 urdu-news-paper
بینک مصیبت میں، مہنگائی و بے روزگاری بے قابو  یہ ’وکاس‘ ہے یا ’وِناش‘: راہل گاندھی

نئی دہلی-18نومبر(ایجنسی)کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی نے مرکز کی مودی حکومت کو معیشت کی خستہ حالی سے متعلق ایک بار پھر نشانہ بنایا ہے- انھوں نے بینکوں اور جی ڈی پی کی خستہ حالت، مہنگائی و بے روزگاری کو لے کر حکومت سے بذریعہ ٹوئٹ سوال پوچھا ہے- ٹوئٹ میں راہل گاندھی نے لکھا ہے کہ بینک مصیبت میں ہیں اور جی ڈی پی بھی- مہنگائی اتنی زیادہ ہے جو کبھی نہیں تھی، نہ ہی بے روزگاری- عوام کی ہمت ٹوٹ رہی ہے اور سماجی انصاف کو روزانہ کچلا جا رہا ہے- وِکاس یا وناش؟“غور طلب ہے کہ جی ڈی پی تاریخی گراوٹ کے ساتھ مائنس میں ہے- ہندوستان کی تاریخ میں بے روزگاری سب سے اونچائی پر ہے- مہنگائی سے لوگوں کا برا حال ہو رہا ہے- اس سے پہلے بھی کئی بینک دیوالیہ ہو چکے ہیں - یہی وجہ ہے کہ راہل گاندھی نے اس ایشو کو لے کر مرکز کی مودی حکومت پر حملہ کیا ہے اور پوچھا ہے کہ حکومت کی نگاہ میں آخر وِکاس (ترقی) کسے کہتے ہیں، کیونکہ اگر یہ وِکاس ہے تو ’وِناش‘ (تباہی) کسے کہتے ہیں؟


Recent Post

Popular Links