میسور میں نان گرین پٹاخوں کی دکانوں کو بند کردیا گیا

RushdaInfotech November 15th 2020 urdu-news-paper
میسور میں نان گرین پٹاخوں کی دکانوں کو بند کردیا گیا

میسور14نومبر(پیر پاشاہ) کووڈ 19-کے ماحول میں اس مرتبہ نان گرین پٹاخوں کو فروخت نہ کرنے کے لئے ریاستی حکومت نے سختی کے ساتھ ہدایت جاری کی ہے۔ جس کے پیش نظر شہر میسور میں بھی ان گرین پٹاکوں کو فروخت کرنے کے سختی کے ساتھ پابندی عائد کی گئی ہے۔ شہر کے مختلف علاقوں میں نان گرین پٹاخوں کی دکانوں کو بند کردیا گیا ہے۔ میسور کی پولیس اور کرناٹکا اسٹیٹ پولیوشن کنٹرول بورڈٖ کے افسروں نے سختی کے ساتھ ریاستی حکومت کی ہدایت کو لاگو کرتے ہوئے نان گرین پٹاخوں کی دکانوں کو بند کرادیا۔ جب ڈپٹی کمشنر آف پولیس ڈاکٹر اے ین پرکاش جے کے میدان پہنچے تو پٹاخوں کی دکان کے مالک نے ڈی سی پی سے نان گرین پٹاخوں کو فروخت کرنے کی اجازت فراہم کرنے کا مطالبہ کیا۔ لیکن ڈی سی پی نے اس دکان کے مالک کی گزارش کو مسترد کرتے ہوئے صرف گرین پٹاخوں کو فروخت کرنے کی اجازت دی اور بقیہ دکانوں کو بند کردینے کی ہدایت دی۔ اور نان گرین کے پٹاخوں کی دکانوں کے مالکوں کو وارننگ دی کہ وہ فوراً ان نان گرین پٹاخوں کی فیکٹری کو واپس کردیں ورنہ پولیس ان نان گرین پٹاخوں کو ضبط کرلے گی۔ آج صبح ابتداء سے جے کے میدان میں صرف سرکاری افسرہی نظر آئے لیکن خریدنے والاکوئی نظر نہیں آیا۔ کرناٹکا اسٹیٹ پولیوشن کنٹرول بورڈ کے افسروں نے کرناٹک ہائی کورٹ کے حکم کی کاپیاں بھی ساتھ میں لائے ہوئے تھے۔ نان گرین پٹاخوں کی دکانوں کی مالکوں کی لاکھ منت و سماجت کے بعد بھی انہیں نان گرین پٹاخوں کو فروخت کرنے کی اجازت نہیں دی۔


Recent Post

Popular Links