جلسہ وجلوس میلاد ؐ کیلئے امسال اجازت نہیں ہو گی کورونا وائرس کے سبب حکام کا فیصلہ، سماجی فاصلہ کے ساتھ مساجد میں تقریب کے اہتمام کی اجازت

RushdaInfotech October 18th 2020 urdu-news-paper
جلسہ وجلوس میلاد ؐ کیلئے امسال اجازت نہیں ہو گی کورونا وائرس کے سبب حکام کا فیصلہ، سماجی فاصلہ کے ساتھ مساجد میں تقریب کے اہتمام کی اجازت

بنگلورو۔17اکتوبر(سالار نیوز)شہر بنگلورو میں میلاد النبیؐ کے موقع پر کسی طرح کے جلسہ عام اور جلوس کے اہتمام کی اجازت نہیں دی جائے گی۔ جس طرح تمام مذاہب کی تقریبات کا عوامی اہتمام نہیں ہو رہا ہے اسی طرز پر میلاد النبی ؐ کے موقع پر بھی عوامی تقریب یا جلوس کے لئے اجاز ت نہیں ہو گی، البتہ مساجد کے اندر سماجی فاصلہ کی پابندی کے ساتھ اگر اجلاس منعقد کرلیا جائے تو اس میں کوئی حرج نہیں۔ یہ بات ہفتہ کے روز شہر کے پولیس کمشنر کمل پنت نے کہی۔ آل کرناٹک میلاد و سیرت کمیٹی، جلوس محمدیؐ کمیٹی، سنی جمعیت آل کرناٹک اور دیگر علمائے کرام کے ایک نمائندہ وفد نے پولیس کمشنر سے ملاقات کی۔اس ملاقات کے دوران انہوں نے کہا کہ محکمہ پولیس میلاد النبی ؐ کے اہتمام کے متعلق ریاستی وقف بورڈ کی طرف سے جاری ہونے والی ہدایات کا انتظار کر رہا ہے، بورڈ کی طرف سے جو ہدایات مرتب کی جائیں گی اس سلسلہ میں چیف سکریٹری سے وہ بات کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ کورونا وائرس کے سبب گزشتہ آٹھ ماہ سے سماجی فاصلہ کی پابندیوں پر عمل کیا جا رہا ہے۔ اب حالات میں قدرے سدھار آ رہا ہے، اگر یہی سدھار کا سلسلہ جاری رہا تو ممکن ہے کہ آ ئندہ اپریل مئی تک حالات سدھر جائیں گے۔ لیکن اس وقت تک ہر ممکن احتیاط لازم ہے، اس میں کسی طرح کی غفلت نہیں ہونی چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ میلاد النبی ؐ کے موقع پر عام ضیافتوں کے اہتما م پر بھی پابندی رہے گی، البتہ اگر مساجد کے اندر ہی کھانے کی تقسیم کا نظم سماجی فاصلہ کے ساتھ کر لیا جائے تو اس پر کوئی اعتراض نہیں۔ اس میٹنگ میں شہر کے پولیس کمشنر کمل پنت کے علاوہ اڈیشنل کمشنر آف پولیس (ایسٹ)اے مروگن، اڈیشنل کمشنر آف پولیس(ویسٹ) سومندو مکھرجی، ڈی سی پی (ویسٹ)سندیپ پاٹل، ڈی سی پی پی (آر او)اشونی کے علاوہ مولانا مقصود عمران رشادی خطیب و امام جامع مسجد بنگلور و سٹی،مولانا ذوالفقار رضا نوری خطیب و امام جامعہ حضرت بلال، معید الرحمن قادری صدر آل کرناٹک میلاد وسیرت کمیٹی، افسر بیگ قادری جنرل سکریٹری جلوس محمدی کمیٹی،سید اعجاز احمد حسینی خازن آل کرناٹک میلاد و سیرت کمیٹی اور دیگر ذمہ داران موجود تھے۔ سنی جمعیت العلماء آل کرناٹک کے سکریٹری عثمان شریف نے اس میٹنگ میں لئے گئے فیصلے سے اتفاق کیا اور کہا کہ وقف بورڈ اور حکومت کی طرف سے جو رہنما خطوط جاری کئے جائیں گے ان کے مطابق عمل ہو گا۔


Recent Post

Popular Links