روہنگیا مہاجرین کو پاسپورٹ جاری نہیں کرنے پر سنگین نتائج بھگتنے کیلئے تیاررہے بنگلہ دیش:سعودی عرب

RushdaInfotech October 12th 2020 urdu-news-paper
روہنگیا مہاجرین کو پاسپورٹ جاری نہیں کرنے پر  سنگین نتائج بھگتنے کیلئے تیاررہے بنگلہ دیش:سعودی عرب

ریاض-11/اکتوبر(ایجنسی)سعودی عرب نے مبینہ طور پر بنگلہ دیش کو دھمکی دی ہے کہ سعودی عرب میں کئی دہائیوں سے مقیم54ہزار روہنگیا مہاجرین کو پاسپورٹ جاری نہ کرنے کی صورت میں ڈھاکہ کو سخت نتائج کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے-چالیس برس قبل سعودی عرب نے میانمار میں مظالم کا نشانہ بننے والے ہزاروں روہنگیا مہاجرین کو ملک میں پناہ دینے کی اجازت دی تھی- اب ریاض حکومت چاہتی ہے کہ بنگلہ دیش تقریباً 54000ایسے روہنگیا مہاجرین کو بنگلہ دیش کی شہریت حاصل کرنے کی اجازت دے، جو گزشتہ کئی دہائیوں سے سعودی عرب میں مقیم ہیں -سعودی عرب میں ایک طویل عرصے سے رہنے کے باوجود یہ روہنگیا مہاجرین ’بے وطن‘ ہیں، یعنی وہ کسی بھی ملک کا پاسپورٹ نہیں رکھتے- یہاں تک کہ ان مہاجرین کے بچے جو سعودی عرب میں پیدا ہوئے تھے اور عربی زبان بولتے ہیں، انہیں بھی سعودی شہریت نہیں دی جاتی-ڈھاکہ حکومت کا کہنا ہے کہ سعودی عرب میں مقیم ان روہنگیا مہاجرین کی اکثریت نے بنگلہ دیش کی سرزمین پر کبھی قدم تک نہیں رکھا- گزشتہ ماہ بنگلہ دیش کے وزیر خارجہ اے کے عبدالمومن نے ایک پریس کانفرنس میں بتایا تھا کہ ریاض حکومت نے ڈھاکہ سے کہا ہے کہ ان روہنگیا مہاجرین کو بنگلہ دیشی پاسپورٹ دیے جائیں، کیوں کہ سعودی عرب میں شہریت کے بغیر افراد کو رہنے کی اجازت نہیں دی جاتی-سعودی عرب میں تقریباً20لاکھ سے زائد بنگلہ دیشی باشندے ملازمت کرتے ہیں - یہ شہری سالانہ 3.5 بلین امریکی ڈالر سے زائد تک کی رقم بنگلہ دیش بھیجتے ہیں - اس زرمبادلہ پر جنوبی ایشیائی ملک کی معیشت بہت زیادہ انحصار کرتی ہے-سعودی عرب نے مبینہ طور پر بنگلہ دیش کو دھمکی دی ہے کہ اگر انہوں نے روہنگیا مہاجرین کو پاسپورٹ جاری نہیں کئے تو اس کے سنگین نتائج برآمد ہوں گے-


Recent Post

Popular Links