کسانوں کی زمین پر قبضہ کے خلاف اسمبلی میں آواز اٹھائی جائے گی۔کمار سوامی

RushdaInfotech September 21st 2020 urdu-news-paper
کسانوں کی زمین پر  قبضہ کے خلاف اسمبلی میں آواز اٹھائی جائے گی۔کمار سوامی

ناگ منگل۔20ستمبر (سالارنیوز) سابق ریاستی وزیر اعلیٰ ایچ ڈی کمار سوامی نے یہاں تیقن دیا کہ تعلقہ کے بلور ہوبلی کے کالنگن ہلی کے قریب حکومت کی جانب سے 1,277/ایکڑ زمین پر قبضہ کئے جانے کے فیصلہ کے خلاف وہ اسمبلی اجلاس میں آواز اٹھائیں گے۔ یہاں ہٹنہ گیٹ کے قریب کسانوں کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کمار سوامی نے یہ یقین دلایا اور کہاکہ انڈسٹریل ایسٹیٹ قائم کرنے کے مقصد کے تحت حکومت نے زمین تحویل میں لینے کا فیصلہ کیا ہے،لیکن کسان اس کے خلاف ہیں۔ تعلقہ کے عوام روز گار کی تلاش میں نہ صرف ملک بھر بلکہ دنیا بھر میں پھیل چکے ہیں اور روزگار فراہم کرنے صنعتی علاقہ کیلئے میرے دور میں منگلور۔ بنگلور قومی شاہراہ پر صرف 300تا 500/ایکڑ زمین پر پائلٹ پروجیکٹ کا منصوبہ بنایا تھا۔ اب حکومت 1,277/ایکڑ زمین پر کس لئے قبضہ کرنے جارہی ہے اور زرخیز زمین کو ڈی نوٹیفائی کرنے کے وہ خلاف ہیں۔ اس موقع پر مقامی رکن اسمبلی سریش گوڈا نے کہا کہ کسانوں کی زمین پر قبضہ کرنے کا الزام ان کے سر تھوپنے بی جے پی حکومت سازش کررہی ہے۔ان کے علم میں لائے بغیر حکومت نے یہ فیصلہ کیا ہے،جبکہ حلقہ کے رکن اسمبلی کو اعتماد میں لینا ضروری ہے۔ اس موقع پر رکن کونسل اپاجی گوڈا،سابق رکن پارلیمان ایل آر شیورامے گوڈا نے بھی کسانوں کی جدوجہد کی مکمل حمایت کا اعلان کیا۔ اجلاس میں ضلع پنچایت اسٹانڈنگ کمیٹی کے صدر متنا، ناگیش،ڈی ٹی سرینواس، داساشیٹی اور کثیر تعداد میں کسان حاضر رہے۔


Recent Post

Popular Links