بنگلور میڈیکل کالج میں سہولتوں کافقدان سیاہ پٹیاں باندھ کر نرسوں نے احتجاج کیا

RushdaInfotech August 1st 2020 urdu-news-paper
بنگلور میڈیکل کالج میں سہولتوں کافقدان سیاہ پٹیاں باندھ کر نرسوں نے احتجاج کیا

بنگلور:31/جولائی(سالار نیوز)جیوتی سنجیونی،کے جی آئی ڈی،این پی ایس سمیت دیگر سہولتوں کی فراہمی کامطالبہ کرتے ہوئے بنگلور میڈیکل کالج اینڈ ریسرچ سنٹر میں مستقل طورپر کام انجام دے رہے نرسوں نے گزشتہ روز پی پی ای کٹ اور بازوؤں پر سیاہ پٹیاں باندھ کر احتجاج کیا۔میڈیکل کالج کے احاطے میں کئے گئے اس احتجاج میں شامل نرسوں نے کہاکہ محکمہ میڈکل ایجوکیشن کے ماتحت چلنے والے بی ایم سی (بنگلور میڈیکل کالج)سمیت ریاست کے تمام میڈیکل کالجس کو اپنا خود کا اختیار دیاگیاہے اور آزادانہ درجہ دیاہے۔2017ء کے بعد محکمہ صحت سے الگ کئے گئے اس کالج میں نرسوں کوتنخواہ کے سوا دیگر کوئی سہولت نہیں دی جارہی ہے۔محکمہ صحت کے ملازمین کو دی جانے والی سہولتیں محکمہ میڈیکل ایجوکیشن کے ملازمین کو بھی دی جائیں۔انہوں نے مطالبہ کیا کہ بیسک تنخواہ میں بھی 50فیصد کا اضافہ کئے جانے کی مانگ کرتے ہوئے کئی مرتبہ حکومت اور متعلقہ وزراء کویادداشت پیش کی گئی،مگر کوئی فائدہ نہیں ہوا۔اس احتجاج میں بی ایم سی نرسس اسوسی ایشن کے صدر سنتوش کمار کے علاوہ دیگر موجود تھے۔


Recent Post

Popular Links