کووِڈ کے خلاف جدوجہد میں تعاون نہ کرنے والے نجی اسپتالوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔ڈاکٹرسدھاکر

RushdaInfotech July 31st 2020 urdu-news-paper
کووِڈ کے خلاف جدوجہد میں تعاون نہ کرنے والے نجی اسپتالوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔ڈاکٹرسدھاکر

بنگلورو۔30/جولائی (سالارنیوز) ریاستی وزیر برائے میڈیکل تعلیم ڈاکٹر سدھاکرنے کہا کہ ریاست میں کووِڈ کے خلاف کی جارہی جدوجہد میں تعاون نہ کرنے والے نجی اسپتالوں کے خلاف بلا مروت قانونی کارروائی کی جائے گی۔ انہوں نے بتایا کہ اس سلسلہ میں وزیراعلیٰ ایڈی یورپا سے بھی بات چیت ہوئی ہے۔انہوں نے بتایا کہ سرکاری اسپتالوں میں کووِڈ مریضوں کے کثرت سے داخلے ہورہے ہیں اورعلاج بھی ہورہا ہے لیکن اکثر نجی اسپتالوں میں کووِڈ مریضوں کو داخل کرنے اور ان کا علاج کرنے سے انکار کیا جارہا ہے۔ایسے کئی معاملات حکومت کے علم میں آئے ہیں۔ کے پی ایم ای قانون اور این ڈی ایم اے قانون کے تحت کووِڈ مریضوں کو داخل کرنے سے انکار کرنے والوں کے خلاف کارروائی کرنا لازمی ہے۔ اس کے لئے بی بی ایم پی کی حدود میں متعلقہ ڈیویژن کے جوائنٹ کمشنروں کو اختیار دیا گیا ہے کہ وہ مذکورہ قوانین کی خلاف ورزی کرنے والے اسپتالوں کے خلاف کارروائی کریں۔خلاف ورزی کرنے والے نجی اسپتالوں کے خلاف کارروائی کے دوران پولیس کا تعاون بھی لیا جائے گا۔اس ضمن میں وزیراعلیٰ سے وہ تفصیلی گفتگو کرچکے ہیں۔اس کے بعد وزیر موصوف نے بی بی ایم پی کے ہر ڈیویژن کے جوائنٹ کمشنر سے بات کرکے کورونا کی صورتحال سے متعلق معلومات حاصل کی ہیں۔متعلقہ افسروں کو اس موقع پر انہوں نے ہدایت دی ہے کہ اپنے ڈیویژن میں کورونا جانچ کی جو موجودہ تعداد ہے اس میں چار گنا اضافہ کیا جائے۔سینئر افسران شالنی رجنیش، تشار گری ناتھ، بی بی ایم پی کمشنر منجوناتھ پرساد نے وزیر موصوف کی ویڈیو کانفرنس میں حصہ لے کر کورونا پر قابو پانے سے متعلق تبادلہ خیال کیا۔کورونا کے ٹسٹ سست رفتاری سے چل رہے ہیں،اس میں تیزی لانے اور ٹسٹوں کی تعداد میں چار گنا اضافہ کرنے سدھاکر نے متعلقہ افسروں کو سخت ہدایت دی ہے۔


Recent Post

Popular Links