چامنڈیشوری حلقے سے انتخاب لڑنے سدرامیا کا فیصلہ

چامنڈیشوری حلقے سے انتخاب لڑنے سدرامیا کا فیصلہ

میسور 10 اکتوبر ( نامہ نگار )ریاستی وزیر اعلیٰ سدارامیا جہاں بھی جارہے ہیں میسور کے حلقہ چامنڈیشوری سے الیکشن لڑنے کے بارے میں بار بار اعلان کررہے ہیں۔ اور سدارامیا کے ان منصوبوں کو ناکام کرنے جنتادل ( یس ) کے قائدین لگا تار کوشش میں لگے ہوئے ہیں۔ میسور ضلع کے حلقہ کے آر نگر کے رکن اسمبلی سارا مہیش نے میسور کے ضلع کے اکثر حلقوں میں کامیابی حاصل کرنے کی بات کررہے ہیں اور کہا کہ سال 2018 میں منعقد ہونے والے اسمبلی کے چناؤ میں میسورضلع میں جنتا دل ( یس ) شاندار مظاہرہ کرے گی۔ اور زیادہ سے زیادہ سیٹیں حاصل کرنے کی کوشش کریگی۔ اور جنتا دل ( یس ) کے تمام قائدین متحد ہیں اور شاندار کامیابی حاصل کرنے کی کوشش میں جڑ گئے ہیں۔ ایک سوال کے جواب میں سارا مہیش نے بتایا کہ اسمبلی کے انتخابات مین جنتا دل ( یس ) کانگریس اور بھارتیہ جنتا پارٹی دونوں پارٹیوں سے دوری بنائے رکھنے کی کوشش کریگی تاکہ میسور ضلع میں جنتا دل ( یس ) کی مقبولیت کا صحیح اندازہ پیش کیا جاسکے۔ حلقہ چامنڈیشوری کے رکن اسمبلی و جنتا دل ( یس ) قائد جی ٹی دیوے گوڈا اور سابق ریاستی وزیر اے ہچ وشواناتھ نے حال ہی میں کانگریس کو چھوڑ کر بھارتیہ جنتا پارٹی میں شامل ہونے والے دلت لیڈر وی سرنیواس پرساد سے ملاقات کی اور سدارامیا کو شکست دینے تعاون کرنے کی اپیل کی ہے۔
آئندہ انتخابات میں حلقہ چامنڈیوشوری سے سدرامیا کانگریس پارٹی کے امیدوار ہوں گے اور موجودہ رکن اسمبلی شری جی ٹی دیوے گوڈا جنتا دل ( یس ) کے امیدوار ہونگے اور دونوں میں کڑا مقابلہ ہوگا۔ اور سدرامیا کو شکست دینے بھارتیہ جنتا پارٹی کے قائدوی سرنیواس پرساد سے تعاؤن کی گزارش کی ہے۔



Like us to get latest Updates